جمشید دستی قانون دان بننے کے لئے تیار ، لیکن امتحان کا نتیجہ کیا آیا ؟؟؟؟

جنوبی پنجاب کے معروف سیاستدان اور سابق رکن قومی اسمبلی جمشید دستی قانون دان بننے کے لئے امتحان دیا لیکن وہ ایل ایل بی کا امتحان پاس کرنے میں ناکام ہو گئے –

میڈیا رپورٹس کے مطابق انہوں نے ایل ایل بی کا امتحان ملتان کی بہاالدین زکریا یونیورسٹی کے زیر اہتمام دیا اور یونیورسٹی کی جانب سے اعلان کردہ نتائج کے مطابق جمشید دستی قانون کے تمام پرچوں میں ناکام ہو گئے ہیں-

واضح رہے کہ قبل ازیں پاکستان پیپلز پارٹی (پی پی پی) کے رکن قومی اسمبلی ارشاد احمد سیال کے بھائی ایڈووکیٹ امیر اکبر سیال نے بہاالدین احمد زکریا کے وائس چانسلر کو درخواست دی تھی جس میں کہا گیا کہ جمشید احمد دستی کو امتحانات میں شرکت کے لیے ایڈمٹ کارڈ جاری نہ کیا جائے کیونکہ ان کی بی اے کی ڈگری جعلی ہے اور انہیں 2010 میں عدالت نے نااہل قرار دے دیا تھا۔

دوسری جانب جمشید دستی نے کہا کہ وہ اپنی تمام امتحانی کاپیوں کی ازسرنو چیکنگ کے لیے درخواست دیں گے کیونکہ ان کے امتحانی پرچہ جات بہت بہتر ہوئے تھے اور ان کا امتحانات میں پاس ہونے کی قوی امید تھی لیکن نتائج کے مطابق وہ فیل ہو گئے ہیں لیکن پیپرز کی ری چیکنگ کروائیں گے-

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں