نئے ڈومیسٹک کرکٹ نظام کی تیاری ، کتنی ٹیمیں‌ شامل ہونگی؟؟؟

آج کے وزیراعظم اور کل کے کرکٹ کپتان عمران خان اپنے دور عروج پر بھی کرکٹ کے ڈومیسٹک ڈھانچے پر بہت تنقید کرتے تھے لیکن ان کی حکومت کو اب آئے 7 ماہ ہو گئے ہیں جس کی وجہ سے اب کھیلوں بالخصوص کرکٹ حلقوں میں یہ بات زور پکڑ رہی تھی کہ کہ وزیراعظم عمران خان اب پاکستان کے ڈومیسٹک کرکٹ کے لئے کوئی نیا نظام تشکیل دینے کی ہدایت کریں-

میڈیا رپورٹس کے مطابق اب وزیراعظم عمران خان پاکستان کی ڈومیسٹک کرکٹ کے نظام کو تبدیل کرنے کا حکم دیا ہے جس پر عمل درآمد کرت ےوہئے پاکستان کرکٹ بورڈ نے آسٹریلین کرکٹ کی طرز کا مجوزہ ڈومیسٹک ماڈل تیار کرلیا جو عمران خان کے دستخطوں کے بعد نافذ العمل ہو گا –

واضح رہے کہ 3 روز قبل چیئرمین پی سی بی نے چیف آپریٹنگ افسر (سی ای او) سبحان احمد اور ڈائریکٹر کرکٹ آپریشنز ہارون رشید سیمت بورڈ کے دیگر حکام کے ہمراہ وزیراعظم عمران خان سے ملاقات کی تھی۔ جس میں پی سی بی وفد نے وزیراعظم عمران خان کے حکم پر ڈومیسٹک کرکٹ میں اصلاحات سے متعلق ریجنز اور ڈیپارٹمنٹس کا مسودہ تیار کیا تھا اور اس مسودے کے مطابق ڈومیسٹک کرکٹ میں ٹیموں کی تعداد 8 رکھی گئی تھی تاہم عمران خان نے اس مسودے کو مسترد کردیا تھا۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق بعد ازاں وزیراعظم نے پی سی بی کو ہدایت کی تھی کہ وہ آسٹریلین کرکٹ کے طرز کا فرسٹ کلاس ماڈل تیار کریں جس میں صرف 6 ٹیمیں شامل ہوں جس کےبعد 6 ٹیموں پر مشتمل نیا ڈومیسٹک نظام سامنے لایا جارہا ہے-

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں