وفاقی وزیر فیصل واوڈا نے عوام کو ڈیم فنڈ میں پیسے جمع کروانے سے منع کردیا، وجہ کیا بنی؟؟

وفاقی وزیر برائے آبی وسائل فیصل واوڈا نے شہریوں کو ڈیم فنڈ مہم میں پیسے جمع کروانے سے روک دیا ہے اور انکشاف کیا ہے کہ سابق چیف جسٹس ثاقب نثار کے ڈیم چند ہ مہم پر حکومت کا کوئی چیک اینڈ بیلنس نہیں ہے اس لئے شہری اس لئے ڈیم فنڈ میں نقد عطیات نہ دیں۔

نجی ٹی وی چینل میں ایک سوال کے جواب میں وفاقی وزیر کا کہنا تھا کہ شہری ڈیم فنڈ میں جو بھی عطیات دیں وہ کراس چیک یا بینک ٹو بینک ٹرانزیکشنز سے دیں اگر اس کے علاوہ کوئی فنڈ یا رقم جمع کروائی گئی ہے تو کا کوئی حساب کتاب نہیں ہے اور یہ رقم ضائع ہو جائے گی –

ایک اور سوال کے جواب میں انہوں نے اپنی ملازمتوں کے حوالے سے کی گئی بات پر واضح کیا کہ انہوں نے جو جابز کے حوالے سے جو بات کہی تھی وہ بالکل درست ہے جلد ملک میں نوکریاں ہی نوکریاں ہوں گی ۔ 28 ہزار تو اس سال تک صرف ان کی وزرات میں ہوں گی اور یہ سب کچھ 5 سے10 ہفتوں میں سب سامنے آجائے گا۔

وفاقی وزیر فیصل واوڈا کا کہنا تھا کہ ان کی زبان پھسلی تھی نہ انہوں نے کچھ بڑھا چڑھا کر کہا تھا۔ ، گیس آرہی ہے، گاڑیوں اور مشروبات کے پلانٹ لگ رہے ہیں، ایئر لائنز آرہی ہیں تو پھر اس صورتحال میں نوکریاں ہی نوکریاں ہی ہونگی-

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں