ڈی جی نیب نے معاملے کو ختم کرنے کے لئے حمزہ شہباز کو کیا پیش کش کی؟؟ بڑا انکشاف

قومی احتساب بیورو کی کارروائیوں کے بعد تمام اپوزیشن جماعتوں کے ساتھ ساتھ اب حکومت کی جانب سے بھی یہ کہا جارہا ہے کہ نیب سیاست زدہ ہو گیا ہے اور اس کا ایجنڈا احتساب نہیں کچھ اور ہے جس کا اب کھل کر اظہار کیا جارہا ہے –

مسلم لیگ ن کے رہنما اور پنجاب اسمبلی میں حزب اختلاف حمزہ شہباز نے کہا ہے کہ نیب لاہور کے ڈائریکٹر جنرل شہزاد سلیم نے مجھ سے کہا ہے کہ ان کے خلاف جعلی ڈگری کی قرار داد کو ختم کروایا جائے تو آپ کو دوبارہ نوٹس جاری نہیں کیا جائے گا اس کے ساتھ ساتھ اگر وہ (حمزہ شہباز) حکومت سے کوئی سیٹل منٹ کر لیں تو اس سارے معاملے کو رفع دفع کیا جا سکتا ہے –

لاہور میں پریس کانفرنس کے دوران میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ نیب سیاست زدہ ہو چکا ہے یہ وہ نہیں اعلی عدلیہ کہتی ہے، نیب اور نیازی کا گٹھ جوڑ ہے، نیب کے پیچھے نیازی چھپا ہے، میرے گھرمیں دو دن دھاوا بولا گیا، بیمار والدہ کو کال آف نوٹس آگیا اور دو بہنوں کو طلبی کے نوٹس جاری کئے گئے، کیا مہذب معاشرے ایسے بیٹیوں کو نوٹس دیئے جاتے ہیں –

حمزہ شہباز شریف نے واضح کیا کہ وہ جیلوں سے ڈرتے نہیں کیونکہ 8 سال تک انہوں نے مشرف کے احتساب کا سامنا کیا ہے لیکن اب ان کے ساتھ ساتھ ان کے اہلخانہ کے دیگر افراد بالخصوص خواتین کو ہدف کا نشانہ بنایا جارہا ہے جو کسی صورت قابل قبول نہیں –

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں