فیس بک نے پاکستانی شہری کے 2 اکائونٹس بلاک کر دئیے ، لیکن وجہ کیا بنی؟؟ حیرت انگیز خبر

دنیا بھر میں انسانی اور جانوروں کے حقوق کے لئے بہت سی تنظیمیں سرگرم ہیں اور کسی بھی انسان یا جانور کے حقوق کے استحصال کے حوالے سے کام کررہی ہیں اور اعلی فورم پر ایسا کرنے والے افراد کے خلاف شکایات کر کے کارروائی کا مطالبہ کیا جاتا ہے-

ایسا ہی ایک واقعہ ابھی سامنے آیا ہے جب سوشل میڈیا سائٹ فیس بک نے ایک شخص سید قریشی کے دو اکاونٹس بلاک کیے ہیں جن پر ایک بلی کا گلا گھونٹنے سمیت جانوروں کے استحصال کی ویڈیوز اپ لوڈ کی گئی تھیں اور فیس بک نے ایسی تمام ویڈیوز ہٹادیں

میڈیا رپورٹس کے مطابق پاکستان بھر میں 2018 کے انتخابات میں سیاسی کارکنوں کی جانب سے دوسری پارٹیوں کی مخالفت میں جانوروں پر تشدد کی کئی خبریں اور ویڈیوز منظر عام پر آچکی ہیں جبکہ جانوروں پر تشدد کی روک تھام کے قانون مجریہ 1890 کے مطابق کسی جانور کو غیر ضروری طور پر بہیمانہ طریقے سے قتل کرنے کی سزا دو سو روپے جرمانہ اور چھ ماہ کی قید ہے واضح رہے کہ ایسے واقعات کی زیادہ تر رپورٹ ہی نہیں ہوتی اور اگر کچھ کیس سامنے آ بھی جائیں تو بھی ملزمان باآسانی بچ نکلتے ہیں۔ جانوروں پر تشدد کے رجحان کا خاتمہ سخت ترین سزاؤں سے ہی ممکن ہے۔

واضح رہے کہ فیس بک کی جانب سے جانوروں کے ساتھ بہیمانہ سلوک پر دو اکائونٹس بلاک کئے جانے کو سراہا جارہا ہے اور یہ سلسلہ آئندہ بھی جاری رکھنے کی توقع کی گئی ہے ، ایسی کارروائی سے جانوروں کے حقوق سے متعلق آگاہی بھی پیدا ہوتی ہے-

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں