فیصل آباد میں پی ٹی آئی کے اراکین اسمبلی نے معذوروں کی ملازمتوں پر ہاتھ صاف کردئیے

پاکستان تحریک انصاف نے الیکشن سے پہلے جو وعدے عوام سے کئے تھے ان پر عمل درآمد ہونا تو دور کی بات لیکن کم از وہ کام تو نہ کئے جائیں جس کے لئے پاکستان تحریک انصاف کے لیڈران مسلم لیگ ن پر کھلے عام تنقید کرتے تھے یعنی میرٹ پر بھرتیوں کی بجائے سفارشی بھرتیاں وغیرہ ، لیکن اب پی ٹی آئی کے اراکین اسمبلی بھی یہی کررہے ہیں –

میڈیا رپورٹس کے مطابق فیصل آباد سے تعلق رکھنے والےپی ٹی آئی کے 18 اراکین اسمبلی وزیراعظم عمران خان کی پالیسی کے مخالف نکلے ہیں کیونکہ پنجاب حکومت نے محکمہ تعلیم میں معذور افراد کی بھرتیاں کرنے کی ہدایت کی لیکن یہاں پر میرٹ اختیار کرنے کی بجائے فیصل آباد کے 18 اراکین قومی و صوبائی اسمبلی کی جانب سے اپنے من پسند اور حلقہ کے 3 – 3 ناموں کے سفارشی رقعہ جات جاری کر دیئے اور ضلعی ایجوکیشن اتھارٹی کے چیف ایگزیکٹو آفیسر علی احمد سیان نے ان سفارشی تین تین ناموں پر مبنی فہرست تیار کرکے حتمی منظوری کے لئے ڈپٹی کمشنر فیصل آباد سردار سیف اللہ ڈوگر کو بھجوا دی ہے جو جلد آویزاں کر دی جائے گی –

میڈیا رپورٹس کے مطابق اس طرح میرٹ کی بات کرنے والوں کی اپنی ہی پارٹی کے اراکین اسمبلی اپنے سفارشی بھرتی کروا کررہے ہیں جبکہ میرٹ پر آنیوالے معذور گریجوایٹس ہاتھ ملتے رہ گئے- یہاں پر سی ای او ایجوکیشن علی احمد سیان کی کارکردگی پر بھی سوالیہ نشان لگ گیا ہے –

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں