سابق صدر آصف زرداری کا حکومت مخالف بڑا اعلان ، کہاں تحریک چلائیں گے ؟؟

پیپلزپارٹی کے شریک چیئرمین اورسابق صدر آصف علی زرداری نے بڑا اعلان کر دیا ہے جس میں کہا کہ وہ اب پارلیمنٹ میں نہیں بلکہ سڑکوں پر حکومت مخالف تحریک چلائیں گے۔نیب اور معیشت ایک ساتھ نہیں چل سکتی، ان کا دعویٰ تھا کہ ماضی کی اور موجودہ ایمنسٹی اسکیم میں کوئی فرق نہیں۔ ہ جس کے پاس تھوڑے بہت پیسے ہیں وہ بلیک منی کو وائٹ کرلے گا۔

نیب میں کیسز کی سماعت کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے واضح کیا کہ وہ میرا بیٹا ہے اسے بھی انہی انگاروں پرچلنا ہے، بلاول بھٹو شہید بی بی کا بیٹا ہے۔ اور وہ اپنی جدوجہد میں یقینی طورپر کامیاب ہو گا –

سابق صدر کا کہنا تھا کہ ضمانت حاصل کرنا ان کا قانونی حق ہے – ایک اور سوال پر آصف زرداری کا کہنا تھا کہ کوئی رابطہ نہیں ہوا، نواز شریف کا میرے پاس نمبر نہیں۔ اس موقع پر ان سے سوال کیا گیا کہ کیا نواز شریف کو آپ نے اکیلا نہیں چھوڑ دیا؟ جس پر سابق صدر نے کہا کہ ماشاء اللہ وہ ہشاش بشاش رہ رہے ہیں اور وہ اپنی خواہش کے مطابق اپنے شہر لاہور میں رہ رہے ہیں۔

واضح رہے کہ اسلام آباد ہائیکورٹ نے قومی احتساب بیورو (نیب) کی جانب سے سابق صدر اور پاکستان پیپلز پارٹی (پی پی پی) کے شریک چیئرمین آصف علی زرداری کے خلاف جاری 6 کرپشن کے کیسز میں عبوری ضمانت منظور کرلی۔ اسلام آباد ہائی کورٹ میں جسٹس عامر فاروق اور جسٹس محسن اختر کیانی پر مشتمل 2 رکنی بینج نے جعلی اکاؤنٹ کیس کی سماعت کی۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق آصف علی زرداری اور ان کی ہمشیرہ فریال تالپور، جن کی عبوری ضمانت آج ختم ہورہی ہے، عدالت پہنچے، جہاں سیکیورٹی کے سخت انتظامات کیے گئے تھے جبکہ ہائی کورٹ کے اطراف کی سڑکیں بھی عام ٹریفک کے لیے بند کی گئی تھیں۔ آ صف زرداری اور فریال تالپور کے وکلا، ایڈووکیٹ فاروق ایچ نائیک اور سردار لطیف کھوسہ، نے ضمانت میں توسیع کی درخواستیں دائر کیں۔

سابق صدر آصف علی زرداری کی جانب سے سڑکوں پر حکومت مخالف تحریک کے اعلان پر سیاسی جماعتوں میں کھلبلی مچ گئی ہے اور اسے ایک بڑا اعلان قراردیا جارہا ہے جس کے نتائج آئندہ چند روز میں سامنے آ جائیں گے –

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں