شاہد آفریدی نے کونسا بیان جاری کیا کہ نیا پنڈورا باکس کھل گیا ؟؟

پاکستان کرکٹ سپرسٹار شاہد خان آفریدی خبروں میں رہنے کا فن خوب جانتے ہیں اور ہر وقت کسی نہ کسی ایشو پر میڈیا میں موجود رہتے ہیں ، گزشتہ ہفتے انہوں نے اپنی کتاب گیم چینجر کی رونمائی کی جس کے بعد کھیلوں کےحلقوں میں ہلچل سی مچی ہوئی جبکہ اب انہوں نے اپنی بیٹیوں کے بارے میں بیان دے کر سخت تنقید کی زد میں ہیں لیکن پھر بھی وہ اپنے بیان پر ڈٹے ہوئے ہیں –

بوم بوم شاہد خان آفریدی نے اپنے سوشل میڈیا اکائونٹ ٹویٹر پر بیان جاری کیا تھا کہ وہ اپنی بیٹیوں کو کھیلوں میں آنے کی اجازت نہیں دیں گے جس کے بعد سوشل میڈیا پر ایک بحث چھڑ گئی ہے اور تمام صارفین کھل کر اظہار کررہے ہیں تاہم شدید تنقید کے باوجود شاہد آفریدی اپنے موقف پر قائم ہیں اور انہوں نے اپنی حالیہ ٹوئٹ میں کہا کہ میں کس کے بارے میں رائے قائم نہیں کرتا اور لوگوں کی زندگیوں میں مداخلت نہیں کرتا، میں دوسروں سے بھی یہی توقع رکھتا ہوں۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق صارفین کی جانب سے اپنی بیٹیوں کو کھیلوں میں آنے کی اجازت نہ دینے پر انہیں سوشل میڈیا پر شدید تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے منافق اور عورت سے نفرت کرنے والا قرار دیا گیا – اس حوالے سے سلمان صدیقی نے ٹوئٹ کی کہ آفریدی کسی درمیانی عمر کے روایتی پاکستانی سے مختلف نہیں، جو دوسروں کی بیٹیوں کے ساتھ گھومنے کو برا نہیں سمجھتے لیکن اگر اپنی بیٹی یہی کرے تو اس کی مخالفت کرتے ہیں- اسی طرح آشا بیدار نے ٹوئٹر پر لکھا کہ ان کی بیٹیاں، ان کی مرضی؟ واقعی؟ تو اب لڑکیوں کی آواز اور ان کی پسند کی کوئی اہمیت نہیں؟ اس وقت بھی نہیں جب وہ بڑی ہو جائیں؟ کیونکہ ابا نے کہہ دیا ہے- اس کے ساتھ ساتھ مصنفہ بینا شاہ نے بھی آفریدی کو آڑے ہاتھوں لیتے ہوئے کہا کہ آل راؤنڈر ایک بہترین مثال ہیں کہ ’کس طرح پاکستانی معاشرے میں یہ کہتے ہیں کہ میں باپ ہوں، میں فیصلہ کروں گا کہ میری بیٹیاں کیا کریں گی اور کیا نہیں؟ آپ مجھے روکنے کے لیے کچھ بھی نہیں کر سکتے- ٹویٹر اکائونٹس پر دیگر افراد نے مصر کے لیجنڈ فٹ بال کھلاڑی محمد صلاح سمیت ان دیگر افراد کی نشاندہی کی، جو خواتین سے یکساں سلوک اور رویے کے حق میں آواز اٹھاتے ہیں۔

اس کے علاوہ بہت سے افراد ایسے بھی سامنے آئے جنہوں نے سوشل میڈیا پر شاہد آفریدی کے موقف کی کھل کر حمایت بھی کی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں