پاکستان، آئی ایم ایف کے سامنے لیٹ گیا ، یہ ہے عمران خان کا نیا پاکستان ، یہ کس نے کہہ دیا؟؟

مسلم لیگ ن کے صدر اور اپوزیشن لیڈر برائے قومی اسمبلی میاں شہبازشریف کے لندن جانے کے بعد افواہیں گرم تھیں کہ وہ ملک سے بھاگ گئے ہیں اور کبھی واپس نہیں آئیں گے اور یہ بیانیہ پاکستان تحریک انصاف کے عہدیداروں کی جانب سے پھیلایا جارہا تھا جس پر اب رد عمل کا اظہار کرتے ہوئے شہبازشریف نے واضح کرتے ہوئے بڑا اعلان کیا ہے کہ پاکستان واپسی میں تاخیر کے حوالے سے تمام خبریں بے بنیاد ہیں۔چند طبی رپورٹس آنا باقی ہیں، توقع ہے کہ بجٹ سیشن سے قبل پاکستان پہنچ جاؤں گا۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق شہباز شریف نےکہا ہے کہ ہمارے دور میں پاکستان ترقی کی راہ پر چل پڑا تھاجبکہ سب جانتے تھے کہ سلیکٹیڈ وزیراعظم عمران خان کند ذہن کے مالک ہیں، وہ نہ کام کو سمجھتےہیں اور نہ جانتے ہیں۔ بدقسمتی سے عمران خان ڈھٹائی کے ساتھ جھوٹ بھی بہت بولتے ہیں۔ انہوں نے پاکستان کی تاریخ میں اُن سے زیادہ جھوٹا وزیراعظم میں نہیں دیکھا۔ عمران خان نے دیار غیر میں جاکر پاکستان کے متعلق ایسا پروپیگنڈہ کیا کہ پورے معاشی ماحول کو تباہ کردیا۔

مسلم لیگ ن کے صدر کا کہنا تھا کہ وزیر اعظم عمران خان پہلے ایمنسٹی کے خلاف تھے اب خود متعارف کرادی۔ آئی ایم ایف کے پاس نہ جانے کا دعوی کرنے والوں نے آج ان ہی کے بندوں کو اہم پوزیشنز پر تعینات کردیا ہےجبکہ آئی ایم ایف سے اس طرح کی ڈکٹیشن کبھی کسی نے نہیں لی۔ معیشت بدترین حالات کا شکار ہے، اوورسیز تو کیا مقامی سرمایہ کار بھی یہاں پیسہ لگانے کو تیار نہیں ہیں۔ ڈالر کے مقابلے میں روپیہ کی قدر کم کرکے 5 سو ارب روپیہ کا قرضہ ملک پر چڑھا دیا گیا، ڈالر مہنگا ہونے سے پاکستان کی معیشت کا قتل عام کیا گیا ہے۔ پاکستان، آئی ایم ایف کے سامنے لیٹ گیا ہے، یہ ہے عمران خان کا نیا پاکستان۔

مسلم لیگ ن کے صدر شہباز شریف کے واپسی کے اعلان کے بعد لیگی کارکنوں میں خوشی کی لہر دوڑ گئی ہے جبکہ میاں نوازشریف پہلے ہی عید کے بعد حکومت مخالف تحریک چلانے کی اجازت دے چکے ہیں جس کی قیادت میاں شہبازشریف ، حمزہ شہباز اور مریم نواز کو کرنے کی ہدایت کی گئی ہے –

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں