سوشل میڈیا پرتصاویر ایڈیٹ کرکے بلیک میلنگ کے ذریعے لڑکی سے کیا کچھ لے لیا؟ پھر آخر کار

سوشل میڈیا ہماری آج کل کی زندگی میں اتنا شامل ہو گیا ہے کہ سانس لینا تو بھول سکتے ہیں لیکن سوشل میڈیا کا استعمال ایک لمحے کے لئے بھی ترک نہیں کیا جا سکتا جس کے معاشرے میں منفی اثرات سامنے آ رہے ہیں ، اسی طرح کی ایک خبر سامنے آئی ہے جب صوبہ سندھ کے ضلع بدین میں سوشل میڈیا پر نامعلوم ملزمان کی جانب سے بلیک میلنگ کرنے پر جواں سالہ لڑکی نے موت کو گلے لگا لیا ہے

میڈیا رپورٹس کے مطابق اس حوالے سے متوفی لڑکی کے لواحقین نے بتایا کہ ان کی بیٹی کی چھوڑی ہوئی تحریر سے بلیک میلنگ کا پتہ چلا ہے جس میں واضح کیا گیا ہے کہ بلیک میلرز نے اس لڑکی کی تصاویر ایڈٹ کر کے اس کے منگیتر کو بھجوا دی جس کی وجہ سے اس کی منگی بھی ختم ہو گئی جبکہ اس کے بعد وہ بلیک میلر لڑکی سے ہزاروں روپے وصول کرتے رہے اور اب تک 50 ہزار روپے وصول کر چکے تھے لیکن اس کے باوجود بلیک میلرز نے لڑکی کا پیچھا نہ چھوڑا اور مزید رقم کا تقاضا کرتے رہے جس پر لڑکی نے تنگ آ کر زہر پی کر خود کشی کر لی ہے –

میڈیا رپورٹس کے مطابق متوفی لڑکی کے آخری خط کے ذریعے حیدرآباد میں مقیم ملزمان کی نشاندہی ہوگئی، جس کے بعد پولیس نے گرفتاری کے لئے چھاپے مارنے کا سلسلہ شروع کر دیا۔ اس حوالے سے پولیس کا کہنا تھا کہ لواحقین کی شکایت درج کرلی ہے تاہم ملزمان فرار ہیں جن کی تلاش جاری ہے-

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں