ورلڈ کپ میں شریک تمام کھلاڑیوں کو ایک پائی نہ ملی ، ڈیلی الائونس کیسے خرچ کررہے ہیں؟؟

انگلیڈن میں جاری ایک روزہ میچز کا عالمی میلے کی دلچسپیاں عروج پر پہنچ چکی ہیں جس کا اندازہ کل ہونے والے بھارت اور آسٹریلیا کے مابین میچ بھی تھا لیکن انگلیڈ ورلڈ کے منتظمین نے میدان سے ہٹ کر بھی ایک نئی روایت ڈال دی ہے اور ابھی تک ورلڈ کپ میں شامل کرکٹ ٹیموں کے کھلاڑیوں ، آفیشلز ، امپائرز ، میچ ریفریز اور دیگر افراد کو ابھی تک ڈیلی الائونس کی مد میں ایک پائی کی رقم ادا نہیں کی-

میڈیا رپورٹس کے مطابق ورلڈ کپ کے لئے منتظمین نے سب سے بڑی اور حیران کن کوشش کرتے ہوئے کھلاڑیوں، آفیشلز اور آرگنائزرز کو کیش سے دور کردیا اور انہیں ‘پلاسٹ منی’ استعمال کرنے کی ہدایت کی گئی ہے۔ اور ہر کھلاڑی یا آفیشلز یا دیگر افراد کو ایک ڈیبٹ کارڈ جاری کیا گیا ہے جس میں ان کے ڈیلی الاؤنس کے مساوی رقم موجود ہے اور ا س کے ذریعے ہی وہ اپنی روز مرہ کی اشیا خرید سکتے ہیں .

کرکٹ حلقوں نے انگلینڈ ورلڈ کپ انتظامیہ کے اس اقدام کو سراہا ہے کہ کیش ادائیگیوں سے مسائل پیدا ہونے کے خدشات تھا پلاسٹ منی کا اجرا بہترین اقدام ہے –

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں