زرتاج گل وزیر نے زرداری بارے کیا کہہ دیا کہ بختاور بھٹو مشتعل ہو گئیں ؟؟؟

آج کل پاکستان اور لندن میں گرفتاریوں کا موسم چل رہا ہے جس کے باعث سیاستدان مخالفین میں بھی بات چیت گرم سطح پر پہنچ چکی ہے – اس حوالے سے وزیر مملکت برائے ماحولیاتی تبدیلی زرتاج گل وزیر اور سابق صدر آصف زرداری کی بیٹی بختاور بھی ایک دوسرے کے سامنے آ چکی ہیں کیونکہ دونوں ایک دوسرے کی ٹویٹس پر زبردست رسپانس کررہیں-

میڈیا رپورٹس کے مطابق وزیر مملکت برائے ماحولیاتی تبدیلی زرتاج گل وزیر نے ایک ٹویٹ میں نواز شریف، شہباز شریف، مریم نواز ، آصف زرداری، بلاول بھٹو اور بانی متحدہ کی تصاویر شیئر کیں۔ ان تصاویر میں تمام قومی سیاستدان آبدیدہ نظر آرہے تھے۔زرتاج گل کی جانب سے ٹویٹ کیا گیا تو بختاور بھی پیچھے نہ رہیں اور فوری جواب دیا’ کیا آپ کو اس بات کا اندازہ ہے کہ بچے بھی آپ سے زیادہ ذہین ہوتے ہیں ، تمہیں یہ بات اپنی برطرف بہن سے پوچھنی چاہیے‘۔

بختار بھٹو زرداری کے اس ٹویٹ پر زرتاج گل وزیر مشتعل ہو گئیں اور انہیں کھری کھری سنا دی کہ اوہ ، آپ نے تو میری دکھتی رگ پر ہاتھ رکھ دیا، آپ کو اپنے ٹین پرسنٹ والد کے شرمناک ناٹک پر ٹویٹ کے بجائے اپنی آہیں بھرتی ہوئی بہنوں کو تسلی دینی چاہیے، رپورٹس سامنے آرہی ہیں کہ وہ اپنا دماغی توازن کھو رہے ہیں کیونکہ وہ عدالت میں دانت نکال رہے تھے، کیا وہ ذہنی بیماری کی ایک اور درخواست دینے والے ہیں؟‘۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق جب یہ جواب دیا گیا تو بختاور نے اپنا ٹویٹ ڈیلیٹ کردیا لیکن وزیر مملکت پہلے ہی اس کا سکرین شارٹ لے چکی تھیں۔ جسے شیئر کرتے ہوئے لکھا ’ میری طرف سے منہ توڑ جواب دیے جانے پر ڈرپورک اور حواس باختہ بختاور نے اپنا ٹویٹ ڈیلیٹ کردیا، بزدل کہیں کی – اس صورتحال کےاس ٹویٹ پر بختاور بھٹو نے پھر جواب دیا اور زرتاج گل وزیر کی اقوام متحدہ میں کی گئی تقریر کو نشانہ بنایا اور کہا ’ آپ کی طرف سے اونچی آواز میں پڑھنے کے بعد مجھے اس بات پر حیرت ہے کہ آپ ’ disorientated‘ کے سپیلنگ لکھ سکتی ہیں، خود کو اپنے چہرے پر تھپکی دو کیونکہ تم بہت اچھا کام کر رہی ہو۔ جس کے بعد ٹویٹر کا میدان مزید گرم ہو گیا کیونکہ وزیر مملکت کی جانب سے بھرپور جواب دیا گیا کہ یا خدا، سزا کیلئے بے صبری نظر آرہی ہو، کیا آپ ۔۔۔ اپنے کھسکے ہوئے پاپا ڈینٹونک کو بتاﺅ کہ انہیں گرفتار کیا گیا ہے ، انہیں ان کے اصطبل تک نہیں لے جایا جائے گا جو وہ وہ پاگلوں کی طرح کھسیاتی ہنسی ہنس رہے ہیں، اپنی بہن کو بھروسہ رکھنے کی نصیحت کرو، لگتا ہے کہ ذہنی صحت کی خرابی کی درخواست بہت جلد آنے والی ہے-

دونوں خواتین کی ٹویٹربیان بازی پر کئی صارفین بھی سامنے آ گئے اورٹویٹرز پر جاری کردہ بیانات میں الفاظ اور اخلاق کے حوالے سے بختاورکو مارکس دئیے ہیں کیونکہ زرتاج گل کی جانب سے بہت سی باتوں میں احتیاط کا دامن ہاتھ سے چھوڑ دیا گیا ہے جس پر صارفین نے تنقید کی ہے –

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں