ایم ڈی واسا کی بڑی کامیابی ، 18 ارب کے منصوبے کے قرض پر انٹرسٹ ڈنمارک کمپنی ادا کریگی

فیصل آباد:13جون( ) 18ارب روپے کی لاگت سے ویسٹ واٹر ٹریٹمنٹ پلانٹ کے منصوبے کے لیئے ڈنمارک کے وفد کا دورہ واسا،ڈپٹی ھیڈ مشن مس بینٹے شیلر(Ms Bente Schiller) کی قیادت ڈینش ڈائریکٹر انوسٹمنٹ مسز رینا سٹینڈر(Mrs.Rina Stender) اور پراجیکٹ کے لیئے ڈینش کنسلٹینٹ مسٹر لارس میکل جانیسن پر مشتمل وفد کے واسا آفس پہنچنے پر ایم ڈی واسا فقیر محمد چوہدری نے پرتپاک خیرمقدم کیا، ایم ڈی واسا فقیر محمد چوہدری نے واسا ٹیم کے ہمراہ ڈینش وفد سے سوفٹ لون کی فائنینشل ٹرمز اینڈ کنڈیشنز کو حتمی شکل دینے کے لیئے مذاکرات کیئے –

اس موقع پر مینجنگ ڈائریکٹر فقیر محمد چوھدری نے بتایا کہ یہ ہمارے لیئے بڑی خوشی کی بات ہے کہ اس سوفٹ لون کے لیئے ہماری کیبنٹ انٹرسٹ ادا نہیں کرے گی بلکہ یہ انٹرسٹ بھی ڈینش فرم ڈانیڈا ہی ادا کرے گی اس طرح سے اس بڑے شہری منصوبہ کے لیئے حاصل کیا جانے والا یہ قرض حسنہ ہوگا،اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے ڈینش ڈائریکٹر انوسٹمنٹ مسز رینا سٹینڈر نے اس امر پر اپنے اطمینان کا اظہار کیا کہ ڈنمارک کے تعاون سے شروع ہونے والے اس بڑے منصوبے سے 44ملین گیلن ویسٹ واٹر کو دوبارہ ٹریٹمنٹ کے بعد قابل استعمال بنایا جا سکے گا اور اور مدھوانہ ڈرین کے زریعے 90کلو میٹر دور تک دریائے راوی میں پہنچانے کے لیئے ویسٹ واٹر ٹریٹمنٹ کے اس بڑے منصوبہ سے ماحو لیاتی آلودگی کے نہ صرف خاتمہ میں مدد ملے گی بلکہ کسان بھی اس سے مستفید ہو سکیں گے-

وفد کے ارکان نے آج واسا فیصل آباد میں مصروف دن گزارا اور ویسٹ واٹر ٹریٹمنٹ پراجیکٹ کے حوالے سے اگلا لائحہ عمل مرتب کرنے کے لیئے مینجنگ ڈائریکٹر فقیر محمد چوہدری کی قیادت میں ڈائریکٹر آئی اینڈ سی عدنان نثار،ڈائریکٹر پی اینڈ ڈی چوھدری شبیر، ڈپٹی ڈائریکٹر روحان جاوید،ڈپٹی ڈائریکٹر GISثمرین اشرف ،ڈپٹی ڈائریکٹر اسداور اسسٹینٹ ڈائریکٹر فیضان شکور پر مشتمل واسا ٹیم سے تفصیلی مذاکرات کیئے ،یاد رہے گزشتہ سال ہی ڈینش سفیر مسٹرایچ ای رولف ھولمبوئے Mr.H.E.Rolf Holmboe) ( اور مینجنگ ڈائریکٹر فقیر محمد چوہدری نے ویسٹ واٹر ٹریٹمنٹ پراجیکٹ کی فیزیبلٹی سٹڈی کے حوالے سے مفاہمت کی یادداشت( میمورنڈم آف انڈر سٹینڈنگ )پر دستخط کیئے تھے اور دستاویزات کا تبادلہ بھی کیا گیاتھا، اس معاہدے کے بعد اس پراجیکٹ کے لیئے فزیبلٹی سٹڈی کا عمل بھی مکمل کیا جا چکا ہے اوراب اس منصوبے کے پی سی ون کی منظوری کے لیئے معاملہ پی اینڈ ڈی پنجاب میں انڈر پراسیس ہے جس کے بعد وفاقی سطح پر حتمی منظوری کے بعد اس منصوبے پر باقائدہ کام کا آغاز ہو جائے گا، اس موقع پر ایم ڈی واسا فقیر محمد چوہدری نے شرکاء اجلاس کو بتایا کہ اس بڑے منصوبہ کو پایا تکمیل تک پہنچانے کے لیئے 130ملین یورو کی کل رقم میں سے 35%گرانٹ اور65%سوفٹ لون ہو گا جو انٹرسٹ فری ہو گا،اس منصوبے سے فیصل آباد اور گردو نواح کے وسیع علاقوں سے ماحولیاتی آلودگی کے خاتمہ میں مدد ملے گی اور شہریوں کو صحت مند ماحول میسر آئے گا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں