بھارتی ریپر اور بھنگرا گلوکار یویو ہنی سنگھ نے خود کو “ویمنزئیر” قراردیدیا ، کارروائی کا سامنا

بھارتی گلوکار اوراداکار یویو ہنی سنگھ نے خود کو “ویمنزئیر” قرار دیدیا جس پر بھارت میں ان پر شدید تنقید کی جارہی ہے جبکہ اب تو بھارتی ریاست پنجاب کی خواتین سے متعلق کام کرنے والے کمیشن نے بھی اعتراض کر دیا ہے اور پولیس کو گلوکار کیخلاف کارروائی کرنے کے لئے درخواست دیدی ہے –

بھارتی میڈیا رپورٹس کے مطابق یو یو ہنی سنگھ کے گزشتہ برس جاری ہونے والے گانے ’مکھناں‘ کی شاعری پر سخت اعتراضات کیا گیا ہے ، ریپر گلوکار نے دسمبر 2018 میں ٹی سیریز کے بینر تلے ریلیز کیے جانے والے گانے ’مکھناں‘ پر بھارتی ریاست پنجاب کی ویمن کمیشن کو اعتراض ہے، جس نے ریاستی پولیس کو گلوکار کے خلاف کارروائی کے لیے تحریری درخواست بھی دے دی جس میں منیشا گلاٹی کا کہنا تھا کہ یو یو ہنی سنگھ نے ’مکھناں‘ میں خواتین سے متعلق انتہائی بیہودہ شاعری استعمال کی جو ناقابل قبول اور خواتین کی اہمیت کو کم کرنے کے مترادف ہے۔ واضح رہے کہ اعتراض یو یو ہنی سنگھ کے گانے میں شامل ’میں ہوں ویمنزیئر‘ جملے پر اعتراض کرتے ہوئے پولیس کو ان کے خلاف کارروائی کرنے کی درخواست دی ہے۔

واضح رہے کہ یویو ہنی سنگھ کا گانا ’مکھناں‘ کو دسمبر 2018 میں ریلیز کیا گیا تھا اور اسے یوٹیوب پر اب تک 20 کروڑ سے زائد بار دیکھا جا چکا ہے۔ جس میں ویمنزئیر کا لفظ استعمال کیا گیا ہے جس کا مطلب یہ لیا جاتا ہے کہ ایک ایسا شخص جس کے بیک وقت متعدد خواتین سے غیر ازدواجی تعلقات ہوتے ہیں ، جبکہ اس حوالے سے تحفظات بھی سامنے آئے ہیں کہ ویمن کمیشن کو گانے کے بول پر اعتراض کرنے کا خیال ہے 7 ماہ بعد آیا ہے اور اب انہوں نے اس گانے کو بند کرنے کا مطالبہ کیا ہے-

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں