بھارتی اداکارہ سری دیوی ہلاک نہیں ہوئی تھیں بلکہ انہیں قتل کیا گیا تھا ، لیکن کیسے؟؟

بھارتی فلم انڈسٹری کی لیجنڈ اداکارہ سری دیوی کو منظم منصوبہ بندی کے تحت قتل کرنے کا دعوی سامنے آیا ہے اور یہ دعوی ممبئی پولیس کے افسران کی جانب سے کیا جارہا ہے – بھارتی ریاست کیرالہ کے روزنامہ ’کیرالہ کمنڈی‘ کے مطابق ریاستی جیل کے ڈی جی پی رشی راج کا کہنا ہے کہ انہیں اپنے آنجھانی سرجن دوست نے بتایا تھا کہ اس بات کے ثبوت موجود ہیں کہ سری دیوی کو قتل کیا گیا – اخبار میں شائع ہونے والے ایک آرٹیکل میں یہ دعوی بھی کیا گیا ہے کہ سرجن ڈاکٹر عما دھاتن نے بتایا کہ اب تک کے سامنے آنے والے ثبوتوں سے یہ بات درست طور پر ثابت نہیں ہوتی کہ سری دیوی کی موت حادثہ تھی۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق پولیس افسر نے اپنے آنجھانی دوست ڈاکٹر کا حوالہ دیتے ہوئے دعویٰ کیا کہ انہوں نے ایسی کئی باتوں کی نشاندہی کی، جن کی مزید تفتیش سے یہ ثابت ہوسکتا تھا کہ سری دیوی کو منظم منصوبہ بندی کے تحت قتل کیا اور اسی طرح یہ بھی بتایا گیا کہ انہوں نے اور ڈاکٹر عمادھاتن نے کئی مشکل کیسز کو مل کر حل کیا اور سری دیوی کے قتل کیس کے سامنے آنے والے ثبوتوں کو دیکھ کر لگتا ہے کہ انہیں منظم منصوبہ بندی کے تحت قتل کیا گیا-

واضح رہے کہ ڈی جی پی رشی راج سنگھ نے کسی مستند ثبوت کا حوالہ دیے بغیر مفروضوں کی بنیاد پر دعویٰ کیا کہ ان کے خیال میں سری دیوی کو منظم منصوبہ بندی کے تحت قتل کیا گیا – سری دیوی کی پر اسرار ہلاکت پر پہلے بھی پولیس افسر اور جاسوس یہ کہ چکے ہیں کہ انہیں منظم منصوبہ بندی کے تحت قتل کیا گیا تھا – یاد رہے کہ قبل ازیں بھی رواں برس مئی میں دہلی کے ایک جاسوس ادارے میں تفتیشی افسر کی خدمات سر انجام دینے والے سابق پولیس افسر نے بھی دعویٰ کیا تھا کہ سری دیوی کو منظم منصوبہ بندی کے تحت قتل کیا گیا۔

واضح رہے کہ فلمسٹار سری دیوی کی موت گزشتہ سال سعودی عرب میں ایک ہوٹل کے کمرے میں باتھ ٹپ میں ڈوب کر ہوئی تھی جبکہ بعض موقع پر یہ بھی کہا گیا تھا کہ انہوں نے اپنی موت سے قبل بہت زیادہ مقدار میں شراب نوشی کی تھی جس کی وجہ سے وہ باتھ ٹب میں بے ہوش ہوگئیں تھیں اور یہی وجہ تھی ان کی موت کی لیکن بعض حلقوں کی جانب سے سری دیوی کی موت کو قتل قراردیا جاتا رہا ہے-

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں