شہبازشریف کا برطانیہ میں مبینہ سکینڈل ، امدادی ادارے ڈی ایف آئی ڈی نے کیا رد عمل دیدیا؟؟

انگلینڈ کے امدادی ادارے ڈی آئی ایف ڈی کی جانب سے برطانوی اخبار ڈیلی میل میں شائع ہونے والی شریف خاندان سے متعلق خبر کی تردید سامنے آ گئی ہے جس میں اپنا رد عمل ظاہر کرتے ہوئے انہوں نے واضح کیا ہے زلزلہ متاثرین کے لیے امدادی رقم اس وقت ادا کی گئی جب بحالی کے منصوبوں پر کام مکمل ہو گیا تھا۔

ڈیپارٹمنٹ آف انٹرنیشنل ڈویلپمنٹ کی جانب سے جاری کردہ پریس ریلیز میں کہا گیا ہے کہ ادارے کی جانب سے بنیادی توجہ زلزلہ زدہ علاقوں میں بچوں کے اسکولوں کی تعمیر پر مرکوز رکھی گئی، امداد سے بننے والے اسکول مکمل ہوگئے تھے، اس کا آڈٹ بھی کرایا گیا تھا – برطانوی ٹیکس گزاروں کے پیسے سے ہولناک زلزلے کا نشانہ بننے والے افراد کی مدد کی گئی، ہمیں اعتماد ہے کہ ہمارے مضبوط نظام نے برطانوی ٹیکس گزاروں کے پیسے کو دھوکا دہی سے تحفظ فراہم کیا ہے۔

اسی طرح یہ بھی واضح کیا گیا کہ برطانوی اخبار ڈیلی میل کی ڈھائی ہزار الفاظ کی رپورٹ میں ان کے مؤقف کو بالکل آخر میں جگہ دی گئی، برطانوی اخبارنے اپنی ہیڈلائن کے حق میں کم ثبوت پیش کیے ڈی آئی ایف ڈی کی جانب سے یہ بھی کہا گیا کہ ڈیلی میل کی خبر میں دروغ گوئی سے کام لیا گیا ہے اور اس کا حقیقت سے کوئی تعلق نہیں ہے – واضح رہےبرطانوی اخبار نے اپنی رپورٹ میں دعویٰ کیا تھا کہ شہباز شریف کے دور حکومت میں برطانوی امدادی ادارے کی جانب سے حکومت پنجاب کو 50 کروڑ پاؤنڈ دیئے تھے جس میں سے رقم چوری کی گئی جس کی اب متعلقہ ادارے کی جانب سے واضح تردید سامنے آ گئی ہے –

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں