پاک سوزوکی موٹر کمپنی پاکستان میں اپنا پلانٹ بند کررہی ہے ؟؟ انتظامیہ نے واضح کردیا

جہاں ایک طرف ملک بھر میں کاروبار مندے کا شکار ہیں ، ڈالرز کی قدر میں اضافہ جبکہ روپے کی قدر گراوٹ میں جارہی ہے اور کاروباری ادارے اپنی مصنوعات کی تیاری کرنے میں ہچکچاہٹ کا شکار ہیں لیکن اس تمام بحران کے باوجود پاک سوزوکی موٹر کمپنی کی جانب سے واضح کیا گیا ہے کہ ان کا پاکستان میں اپنا پلانٹ بند کرنے کا کوئی پلان نہیں ہے جبکہ جولائی سے د سمبر کی ششماہی میں اپنی پیداوار کو بھی برقرار رکھیں گے –

اس حوالے سے پاک سوزوکی موٹر کمپنی انتظامیہ کی جانب سے سپلائر کوارڈی نیشن اجلاس بلایا گیا جس میں مالی سال کی پہلی ششماہی کی پیداواری مصنوعات کا جائزہ لیتے ہوئے انتظامیہ کو آگاہ کیا گیا – اجلاس کے دوران بعض فروخت کنندگان کا کہنا تھا کہ رواں سال کی پہلی ششماہی میں بنائے گئے 60 ہزار یونٹس کے مقابلے میں دوسری ششماہی میں 76 ہزار سے زائد یونٹس بنائے گی – جس پر کمپنی نے وینڈرز کو یقین دلایا کہ کہ 2019 میں پیداواری ہدف وہی رہے گا جو سال کے آغاز میں تھا، اس کے ساتھ ساتھ یہ بھی کہا گیا کہ فکر کی کوئی ضرورت نہیں ہے کیونکہ کمپنی کو مارکیٹ میں استعمال شدہ چھوٹی گاڑیوں کے خلا کو پر کرنے کا بڑا موقع ملا ہے – وینڈرز نے اپنے تحفظات کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ پی ایس ایم سی کے پاس کم قیمتوں کی گاڑیاں بنانے کا موقع تھا لیکن اس حوالے سے انہیں باضابطہ اعتماد میں نہیں لیا گیا ، اسی طرح بعض فروخت کنندگان نے پاک سوزوکی موٹر کمپنی نے 2019 کے پیداواری ہدف کو مکمل کرنے کا عزم دکھانے کے علاوہ جولائی سے دسمبر کے لیے پیداوار کے حوالے سے خوشی کا اظہار بھی کیا-

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں