فردوس جمال کو ماہرہ خان کا کرارا جواب ، مخالفین اورحمایتی میدان میں آ گئے

سینئر اداکار فردوس جمال اور اداکارہ ماہرہ خان کے مابین کنٹروورسی ہے کہ ختم ہونے کا نام ہی نہیں لے رہی جبکہ اب دونوں فریقین کی جانب سے حمایتی اور مخالفین بھی کھل کر سامنے آ گئے ہیں لیکن اداکارہ ماہرہ خان کی جانب سے جو جواب دیا گیا ہے اس کےبعد اس بحث کو اب ختم ہو جانا چاہئے تھا جو کہ نہیں ہو سکی –

واضح رہے کہ فردوس جمال نے نجی ٹی وی کے ایک مارننگ شو میں گزشتہ ہفتے ماہرہ خان کو اداکارہ ماننے سے انکار کرتے ہوئے ایک ماڈل قرار دیا تھا جبکہ انہوں نے یہ بھی کہا تھا کہ ماہرہ خان کو اس عمر میں ماؤں کا کردار نبھانا چاہیے۔

اس حوالے سے ماہرہ خان نے خود بھی جواب دیا جس میں انہوں نے واضح کیا تھا کہ وہ نفرت کا جواب صرف پیار سے دینا چاہتی ہیں اور کامیاب خواتین کے خیال سے لوگوں کو ڈرنا نہیں چاہیے – اس بیان سامنے آنے کے بعد جہاں ایسا محسوس ہورہا تھا کہ یہ معاملہ اب ختم ہونے جارہا ہے وہیں پاکستان کی نامور ہدایت کار اور پروڈیوسر مومنہ درید نے اس معاملے پر اپنا بیان جاری کرتے ہوئے نیا تنازع کھڑا کردیا۔

اب ہم ٹیلی ویژن کی سینئر پروڈیوسر اور ایم ڈی پروڈکشن کمپنی کی مالک اور سی ای او مومنہ درید نے ماہرہ خان کے حق میں بیان جاری کرتے ہوئے سینئر اداکار فردوس جمال کے ساتھ کسی بھی قسم کا پروفیشنل تعلق نہ رکھنے کا اعلان کردیا۔ انہوں نے اپنے جاری کردہ بیان میں کہا کہ ‘ماہرہ خان مجھے تم پر فخر ہے، وہ فردوس جمال کی تنقید پر بہت ہی منفی انداز میں جواب دے سکتی تھی جو اس کا حق بھی تھا لیکن اس نے نفرت کا جواب پیار سے دینا بہتر سمجھا، یہ ایک مضبوط عورت ہونے کی نشانہ ہے’ – ماہرہ خان پاکستان کا فخر ہیں، وہ صرف ظاہری طور پر خوبصورت ہی نہیں بلکہ ان کا دل بھی صاف ہے اور یہی وجہ ہے کہ وہ سپر اسٹار ہیں۔

اس کے بعد سوشل میڈیا پر ہم ٹی وی کی پروڈیوسر کو سینئر اداکار کے لیے ایسے سخت جملے کہنے پر شدید تنقید کا نشانہ بنایا گیا اور بارے نامور اداکار فیروز خان نے بھی مومنہ درید کے اس فیصلے کے خلاف آواز اٹھاتے ہوئے اپنے انسٹاگرام اکاؤنٹ پر خاتون پروڈیوسر کو چیلنج دے دیا۔ انہوں نے واضح کیا کہ میرا سوال یہ ہے کہ کیا اظہار رائے کی آزادی سے آپ کو یہ ملتا ہے؟ کسی کی روزی روٹی کو روکنا؟ اگر ایسا ہی ہے تو پھر میں یہ چاہتا ہوں کہ ہر اس شخص کے ساتھ ایسا ہی ہو جو کسی دوسرے کو انٹرنیٹ پر برا بھلا کہتا ہے، لیکن یہ ہو نہیں سکتا، ہر بات کی حد ہوتی ہے، اٹھ جائیں اس سے قبل آپ کی باری آجائے’۔ اور اس موقع پر فیروز نے ایک ہیش ٹیگ بھی استعمال کیا اور مومنہ درید کو چیلنج کیا کہ وہ ان کے ساتھ بھی ایسا کرکے دکھائیں جو انہوں نے فردوس جمال کے ساتھ کیا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں