ہم سب مارے گئے اور مسلمان خاموش رہے تو اللہ تعالی کو جوب دینا پڑے گا !


تحریر ، محمد احمد مرتضی

ہم سب مارے گئے اور مسلمان خاموش رہے تو اللہ تعالی کو جوب دینا پڑے گا ،

یہ جملہ کسی بھی مسلمان کو جھنجھوڑنے کے لیے کافی ہے کشمیر کی موجودہ صورت حال اور مسلم ممالک کی معنی خیز خاموشی کے پیش نظر حریت راہنما سید علی گیلانی نے اس پیغام کے ذریعے مسلمانوں کے ضمیر پہ دستک دی کشمیر کی موجودہ صورت حال میں اخلاقی طور پر اقوام متحدہ اور انسانی حقوق کی علمبردار تنظیموں کی ذمہ داری ہے کہ نہتے اور معصوم کشمیری عوام کو حق خودارادیت دیا جائے کشمیریوں کا خون اتنا سستا ہے کہ ہزاروں نوجوانوں کی شہادت بھی اقوام عالم کے لیے معنی نہیں رکھتی لاکھوں بہنوں بیٹیوں کی عزت لٹنے کے بعد بھی کسی عالمی راہنما کے کان پہ جوں نہیں رینگتی سب سے بڑھ کر یہ کہ عالمی برادری کو یہ سوچنا چاہئے مسئلہ کشمیر دو ممالک کے درمیان تنازعہ کی سب سے بڑی وجہ ہے اور دونوں ممالک ایٹمی ہتھیار رکھتے ہیں کیا عالمی برادری یہ چاہتی ہے کہ دونوں ممالک ایٹمی جنگ کا آغاز کردیں ؟

خدارا یہ سوچنا ہوگا اگر اب بھی مسئلہ کشمیر حل نہ کیا گیا تو یہ مسئلہ دونوں ممالک کے ساتھ ساتھ پورے خطے کو اپنی لپیٹ میں لے لے گا اور دنیا کے باقی ممالک بھی اس مسئلے کے اثرات سے بچ نہیں سکیں گے امریکی صدر نے دونوں ممالک کے درمیان تنازعہ کے حل کیلئے ثالثی کی پیشکش کی لیکن بھارت نے فورا انکار کر دیا میرے خیال میں امریکی صدر کی پیشکش بھی خود کو افغانستان سے نکالنے کے لیے پاکستان کو استعمال کرنے کے لیے ہے وگرنہ وہ بھی اس معاملے میں سنجیدہ نہیں ہے اگر امریکی صدر واقعی مسئلہ کشمیر پہ ثالثی کرنے کو تیار ہیں تو کلسٹر بم جوکہ عالمی قوانین کے مطابق جائز نہیں لیکن بھارت کو کلسٹر بم کے بے دریغ استعمال سے بھی کوئی عالمی راہنما اور اقوام متحدہ باز نہ رکھ سکے بھارت کا جنگی جنون اس وقت تک ختم نہیں ہوگا جب تک اسے اس کی زبان میں جواب نہ دیا جائے کشمیری عوام پچھلی سات دہائیوں سے اقوام متحدہ اور بالخصوص پاکستان کی جانب دیکھ رہے ہیں کہ ہم ان کی آزادی کے لیے جدوجہد کر سکیں اور پوری دنیا میں کشمیری بھائیوں کی آواز بلند کر سکیں تاکہ عالمی برادری کا سویا ہوا ضمیر جگا کر بھارت کی بدمعاشی اور مسلمان دشمنی سے کشمیر کا بازیاب کروا سکیں –

پاکستان کی حکومت اور تمام اپوزیشن راہنماؤں کو چاہیے اپنے اندرونی معاملات کو.پس پشت ڈال کر کشمیر کی آواز بنیں اور نہتے کشمیری عوام کو بھارت کے چنگل سے آذادی دلا کر دنیا اور آخرت میں سرخرو ہوں وگرنہ دوسری صورت میں سید علی گیلانی کے یہ الفاظ ہم مارے گئے اور مسلمان خاموش رہے تو اللہ تعالی کو جواب دینا پڑے ہمارا قیامت تک پیچھا کرتے رہیں گے اور کشمیری عوام کے ہاتھ میں ہمارا گریبان ہوگا ہم بروز قیامت کشمیری بھائیوں سے نظریں نہیں ملا سکیں گے-

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں