جارحانہ اوپنر بلے باز شرجیل خان پر عائد پابندی ختم ، قومی ٹیم میں شمولیت کیلئے اب کیا کرنا ہوگا؟؟

میچ فکسنگ بالخصوص اسپاٹ فکسنگ نے پاکستان کے بہت سے مایہ ناز کرکٹرز کے کیرئیر گہنا دئیے ہیں اور سپاٹ فکسنگ کے آخری شکار جارحانہ اوپنر بلے باز شرجیل خان تھے جن پر اڑھائی سالہ پابندی لگائی گئی تھی جو گزشتہ روز ختم ہو گئی ہے اب ان کے لئے میدان کے راستے کیسے کھلیں گے ، یہ ہم بتائیں گے –

میڈیا رپورٹس کے مطابق پاکستانی ٹیم کے اوپنر جارحانہ بلے باز جن کا تعلق حیدرآباد سے ہے شرجیل خان کو اسپاٹ فکسنگ کیس میں ڈھائی برس معطل سمیت پانچ برس کی پابندی کا سامنا کرنا پڑا تھا، اُن کی تیس ماہ کی سزا کل ختم ہو گئی ہے اب شرجیل خان کو کرکٹ کے میدان میں واپسی کے لیے اعتراف جرم کرنے کے ساتھ ساتھ عام معافی مانگنا ہوگی – رپورٹس کے مطابق کرکٹ میں واپسی کے لیے بحالی پروگرام مکمل کرنے کے بعد شرجیل خان کھیلنے کے اہل ہوں گے- واضح رہے کہ شرجیل خان نے ری حیب پروگرام کے لیے گزشتہ ہفتے پی سی بی سے رابطہ کیا تھا۔پی سی بی اینٹی کرپشن سیکورٹی اینڈ ویجیلنس ڈیپارٹمنٹ کی مصروفیت کے باعث ری حیب پروگرام شروع نہ کر سکا ہے ، یہ بھی بتایا گیا ہے کہ شرجیل خان کو ری حیب پروگرام عید کی چھٹیوں کے بعد بجھوایا جائے گا۔ ری حیب پروگرام مکمل کرتے ہی شرجیل خان کو کھیلنے کی اجازت ہو گی ۔

اب اس کی امید کی جا سکتی ہے کہ جارحانہ افتتاحی بلے باز شر جیل خان آئندہ ماہ قائد اعظم ٹرافی میں سندھ کی نمائندگی کرسکتے ہیں اور اپنی کارکردگی کی بنا پر وہ دوبارہ قومی ٹیم میں شامل ہونے کے لئے دروازہ کھٹکھٹا سکتے ہیں –

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں