سلامتی کونسل کے اجلاس سے قبل ڈونلڈ ٹرمپ اور عمران خان کے مابین کیا بات چیت ہوئی؟؟

پاکستان کے وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے واضح کیا ہے کہ اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کے اجلاس سے قبل امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ اور وزیراعظم عمران کیساتھ کے ساتھ ٹیلی فونک رابطہ ہوا ہے اور عمران خان نے کشمیر کی صورتحال پر امریکی صدر سے تبادلہ خیال کیا ہے – وزیراعظم کی امریکی صدر کے ساتھ گفتگو اچھی رہی اور اس بات چیت میں مسلسل رابطے میں رہنے کا فیصلہ کیا گیا۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق وزیر خارجہ کا کہنا تھا کہ عمران خان نے ٹرمپ کو کشمیر کے حوالے سے پاکستانی نکتہ نظر سے آگاہ کیا اور اپنا مؤقف سامنے رکھتے ہوئے صدر ٹرمپ کو اعتماد میں لیا ہے – اس کے ساتھ ساتھ ٹیلی فونک گفتگو میں دونوں رہنماؤں کے درمیان افغانستان کے معاملے پر بھی بات ہوئی – پاکستان نے سلامتی کونسل کے چار مستقل اراکین چین، روس، برطانیہ اور امریکہ کے ساتھ رابطہ کیا ہے اور انہیں امید ہے جلد ہی فرانسیسی حکام کے ساتھ بھی بات ہوگی-

شاہ محمود قریشی کا کہنا تھا کہ اگر صدر ٹرمپ نے مسئلہ کشمیر پر پاکستان اور بھارت کے درمیان ثالثی کرا دی تو خطے کے ایک ارب سے زیادہ عوام صدر ٹرمپ کے لیے دعاگو ہوں گے- واضح رہے کہ اس وقت اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کا کشمیر بارے خصوصی اجلاس آج ہو رہا ہے جس میں پاکستان اپنا موقف پیش کریگا اور تمام ممالک کشمیر ایشو پر تبادلہ خیال کریں گے-

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں