غریب مریضوں پر نیا بم ، ہسپتالوں میں تمام تشخیصی ٹیسٹوں کی فیسوں میں مزید 100 فیصد تک اضافہ

محکمہ صحت پنجاب نے ایک مرتبہ پھر غریب مریضوں پر بم پھینک دیا اور پہلے سے تشخیصی ٹیسٹوں کی بڑھائی گئی فیسوں میں مزید اضافہ کردیا گیا ہے ، عوام اور مریض کدھر جائیں ، ہسپتالوں میں علاج کے لئے آتے ہیں مرنے کے لئے نہییں ، مریضوں کی دہائی –

محکمہ صمت کی منظوری کے بعد محکمہ پرائمری اینڈ سکینڈری ہیلتھ کئیر نے مختلف تشخیصی ٹیسٹوں پر ہچاس سے سو فیصد اضافہ کر دیا ہے۔ جاری کردہ نوٹیفکیشن کے مطابق پرائمری اینڈ سکینڈری ہیلتھ کئیر نے تحصیل و ڈسٹرکٹ ہسپتالوں میں ہونے والے ٹیسٹ کی قیمتوں میں اضافہ کردیا جس کے مطابق ڈینٹل آوٹ ڈور پرچی فیس مفت سے بڑھا کر 50 روپےپ مقرر کر دی گئی۔ سٹی سکین ٹیسٹ ایک ہزار سے 2500 روپے کا کر دیا۔ پنجاب گورنمنٹ ہسپتالوں میں 70 فیصد ٹیسٹوں کو اپنے اختیار میں رکھے گی ۔

نئے مراسلے کے مطابق ڈینٹل اوپی ڈی کی پرچی مفت سے 50 روپے مقرر کی گئی ہے خون کا سی بی سی ٹیسٹ100 سے 200روپے کردیا جبکہ جگر کا ٹیسٹ ایل ایف ٹی 50سے 300 روپے ، ای سی جی 60 سے 100 روپے مقرر کردیا، ایمرجنسی کے ٹیسٹ ٹروپ ٹی 600 روپے کا ہو گا-الٹرا ساونڈ کو 50 سے 150 روپے ، تھائی رائڈ ٹیسٹ 200 سے 900 روپے مقرر کیا گیا ہے ۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں