مصباح الحق نئے ہیڈ کوچ اور وقاریونس بائولنگ کوچ مقرر ، اب جارحانہ کرکٹ ہوگی، کس نے کہا؟؟

پاکستان کرکٹ بورڈ نے سابق کپتان مصباح الحق کو قومی کرکٹ ٹیم کا ہیڈ کوچ اور وقار یونس کو بائولنگ کوچ مقرر کردیا ہے جبکہ مصباح الحق ہیڈکوچ ہونے کے ساتھ ساتھ چیف سلیکٹر بھی ہونگے –

میڈیا رپورٹس کے مطابق پاکستان کرکٹ بورڈ کے سربراہ احسان مانی نے مصباح الحق کو ہیڈ کوچ،چیف سلیکٹر اور وقار یونس کو بولنگ کوچ مقرر کردیا – اس حوالے سے باقاعدہ منظوری دے دی گئی ہے۔ دونوں سابق کھلاڑیوں کا معاہدہ 3سال کے لیے کیا گیا ہے۔اس سے پہلے قومی ٹیم کے ہیڈ کوچ مکی آرتھر اور باولنگ کوچ اظہر محمود تھے۔ ان دونوں کی مدت ختم ہونے کے بعد پی سی بی نے ہیڈ کوچ اور باولنگ کوچ کیلئے اشتہارات جاری کئے تھے جس کے بعد امیدواران سے انٹرویوز لئے گئے اور انٹرویوز کے بعد مصباح الحق کو ہیڈ کوچ اور وقاریونس کو باولنگ کوچ تعینات کر دیا گیا۔

بعد میں نئے ہیڈکوچ مصباح الحق نے پریس کانفرنس کی اور میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ ذمہ داریاں دینے پر پی سی بی کا شکریہ،ٹیم میں بہترید لانے کی کوشش کروں گا ، ذمہ داریوں کو ایمانداری سے نبھانا آسان نہیں ہوتا، کرکٹ میں پروفیشنل ازم لانے کی ضرورت ہے ،جو ذمہ داریاں ملی ان کو اچھے طریقے سے نبھانے کی کوشش کروں گا ،چیف سلیکٹر ہیڈ کوچ اور چیف سلیکٹر کا عہدہ بہت بڑی ذمہ داری ہے ، جو کچھ بھی ہوں پاکستان کی وجہ سے ہوں ، ٹیم میں بہتری لانے کیلئے بھرپور کوشش کروں گا – ہیڈ کوچ کا کہنا تھا کہ کوشش ہو گی ایسی ٹیم تیار ہو جو جارحانہ اننگز کھیلے اور دوسری ٹیم کو پچھاڑ دے ، کوشش ہو گی ایسی ٹیم ہو جو اٹیکنگ کرکٹ کھیلے ، قومی کرکٹ ٹیم کی رینکنگ اور کارکردگی بہتر کرنے کی کوشش کریں گے ، جو وسائل دستیاب ہوں انہی پر ہی حکمت عملی بنائی جاتی ہے۔وسیم خان نے کہا کہ قومی کرکٹ ٹیم کو آگے لے جانے کیلئے ’’ رائٹ پرسن ‘‘ ہیں – اس موقع پر انہوں نے واضح کیا کہ پاکستانی ٹیم اب جارحانہ کرکٹ کرکٹ کھیلی اور یہی وقت کا تقاضا ہے –

اس موقع پر پاکستان کرکٹ بورڈ کےمینجنگ ڈائریکٹر وسیم خان بھی موجود تھے –

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں