ایوان عدل لاہور کے باہر سے اغوا ہونے والی لڑکی اوکاڑہ بائی پاس سے برآمد ، پولیس کیا کہتی ہے؟؟

اوکاڑہ ، ساجد علی نمائندہ خصوصی

سول کورٹ ایوان عدل لاہور کے باہر سے 4 ستمبر کو اغوا ہونے خاتون 14 دن کے بعد بے ہوشی کی حالت میں اوکاڑہ سے برآمد ہوئی ہے – واضح رہے کہ رضیہ نامی لڑکی کو ملزمان نے 4ستمبر کو لاہور سے اغوا کیا تھا – لڑکی کے اغوا کی ایف آئی آر تھانہ اسلام پورہ لاہور میں درج ہے –

تفصیل کے مطابق سول کوٹ ایوان عدل لاہور کے باہر سے اغوا ہونے والی خاتون رضیہ کو ملزمان بیہوشی کی حالت میں اوکاڑہ بائی پاس پر رات کی تاریکی میں پھینک کر فرار ہو گئے ریسکیو 1122نے موقع پر پہنچ کر خاتون کو بیہوشی کی حالت میں ڈی ایچ کیو منقتل کر دیا جہاں پر خاتون نے اپنے ابتدائی بیان میں کہا ہے کہ ملزمان نے اسے لاہور سے اغوا کر کے نامعلوم مقام پر لے جا کر باری باری زیادتی کا نشانہ بناتے رہے ڈی ایس ہی صدر اوکاڑہ ضیاءالحق کا کہنا ہے کہ لڑکی کے گھر والوں نے کہا کہ ان کے مقدمات لاھور میں چل رہے ہیں ہم نے لاھور پولیس کو اطلاع کر دی ہے اس کیس کی مذید انکوائری لاہور میں ہی ہو گی-

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں