پنجاب حکومت کا انقلابی قدم ، ہر سال کتنے ہزار انجینئرز خصوصی کورس کے بعد کہاں تعینات ہونگے؟

پنجاب حکومت کی جانب سے پاکستانی انجینئرز کی عالمی معیار کے مطابق تربیت کیلئے انقلابی قدم اٹھایا ہے اس حوالے سے محکمہ ھائیر ایجوکیشن اور لیمپرومیلن لمیٹڈ پاکستان کے درمیان معاہدہ طے پایا ہے جس کی رو سے ہر سال 5 ہزار انجینئرز کو لیمپرو میلن سرٹیفکیٹ کا کورس کروایا جائے گا-ہر سال 5 ہزار انجینئرنگ کے طالب علم لیمپرو میلن سرٹیفکیشن کا امتحان دیں گے۔ یہ معاہدہ اگلے 10 برس کیلئے ہوگا اور لیمپرو میلن سرٹیفکیشن کے امتحان میں کامیاب انجینئرز کو روزگار کے بہترین مواقع میسر آئیں گے۔

اس حوالے سے آج ایک تقریب وزیراعلی ہائوس میں ہوا جس کے مہمان خصوصی وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدار تھے جبکہ سیکرٹری محکمہ ہائیر ایجوکیشن پنجاب ساجد ظفر ڈال اور صدر لیمپرو میلن پاکستان صباحت رفیق نے مفاہمت کی یادداشت پر دستخط کئے۔ معاہدے کے تحت محکمہ ہائیر ایجوکیشن پنجاب کی یونیورسٹیوں اور تعلیمی اداروں کے انجینئرز لیمپرو میلن سرٹیفکیشن کا کورس کریں گے – اس موقع پر وزیراعلیٰ پنجاب نے خصوصی گفتگو کرتے ہوئے بتایا کہ اس معاہدے سے پاکستان خصوصاً پنجاب کے انجینئرز کو سیمی کنڈکٹر انڈسٹری میں بہترین روزگار کے مواقع ملیں گے۔اگلے 5 برس کے دوران پاکستان کے 70 ہزار انجینئرز انٹرنیشنل سیمی کنڈکٹر انڈسٹری میں ملازمتیں حاصل کرسکیں گے۔مزیدیکہ نوجوانوں میں سکلز کو فروغ دینا وقت کا تقاضا ہے اور نوجوانوں کے روشن مستقبل پروگرام کیلئے یہ پروگرام ایک نوید ہے- صوبائی وزیر ہائر ایجوکیشن یاسرہمایوں،اراکین اسمبلی،چیئرمین منصوبہ بندی و ترقیات،ڈی جی لاہوروالڈ سٹی اتھارٹی،متعلقہ افسران اورلیمپرو میلن لمیٹڈ کے حکام بھی اس موقع پر موجود تھے –

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں