نظر کی کمزوری کیسے دور کریں ؟؟؟ ازقلم عابد عمر

بینائی کی کمزوری کی بہت سی وجوہات ہیں جن میں دماغی و اعصابی کمزوری سب سے زیادہ خطرناک اور توجہ طلب ہیں ۔ خوراک پر توجہ دے کر اور ضروری غذائی اجزاء کے حصول کے ذریعے نظر کی کمزوری کے عارضے سے بچا جاسکتا ہے ۔ اگر آپ اپنی روزمرہ کی خوراک میں زنک ،کیلشیم ، کاپر ، آئرن ، سلفر اور فاسفورس وغیرہ کی مناسب مقدار والے غذائی اجزاء شامل کرلیں تو آنکھوں کو صحت مند اور نظر کو بہتر بنایا جاسکتا ہے ۔ بچوں کو نظر کی کمزوری سے محفوظ رکھنے کے لئے ماہرین بادام ، مغزیات ، کھجور ، انجیر ، مچھلی ، زیتون اور اسی طرح کے بے شمار عناصر تجویز کرتے ہیں ۔ ماہرین یہ بھی مشورہ دیتے ہیں کہ بچے کو لیٹ کر پڑھنے ، کتاب کو آنکھوں کے بہت قریب کرنے اور کھانے کے فوری بعد پڑھنے سے منع کریں ۔ اس سے آنکھوں کی صحت پر منفی اثرات مرتب ہوتے ہیں ۔

ٹی وی ، لیپ ٹاپ ، مونیٹر اور موبائل سکرین کا بہت زیادہ استعمال بھی آنکھوں کو متاثر کرتا ہے ۔ لہذا ان چیزوں سے بچوں کو دور رکھنا بہت ضروری ہے ۔ آنکھوں پر ٹھنڈے پانی کے چھینٹے مارنا ، سبزے کی طرف ٹکٹکی باندھ کر دیکھنا ، بہتے پانی پر نگاہیں جمانا اور بصارت کو تیز کرنے والی آنکھوں کی ورزشیں بھی نظر تیز کرنے میں معاون ثابت ہوتی ہیں ۔

اس کے علاوہ نظر کمزور ہو جانے کی صورت میں علاج کے طور پر سوگرام مغزدھنیا ، سو گرام مغز سونف ، سو گرام مغز بادام اور پچیس گرام سیاہ مرچ کو سفوف بناکر پانچ سو گرام دیسی گھی اور ہم وزن دیسی شکر ملا کر مرکب بنا لیں ۔اسے صبح شام نہار منہ ایک چمچ کھا کر نیم گرم دودھ کا ایک گلاس پی لیں ۔ متواتر تین سے چھ ماہ تک استعمال سے نظر کی کمزوری کا مسئلہ حل ہو جائے گا_

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں