. “عمران خان کو بغاوت کا سامنا ” …………….. ٹی اے تمیمی کے قلم سے

موجود صورتحال میں پنجاب کے چوہدریوں نے وزیراعظم عمران خان کو وزیراعظم کے منصب سے ہٹانے کے لیے بغاوت شروع کر دی ہے اس سلسلے میں گورنر پنجاب چوہدری سرور نے گجرات کے چوہدریوں سے ہاتھ ملا. لیا ہے، گورنر پنجاب چوہدری سرور نے اپنا گروپ بنا لیا ہے جنکی مکمل سرپرستی چوہدری پرویز الٰہی کررہے ہیں، ان چوہدریوں کی قیادت میں 20 ایم این اے عمران خان کو چھوڑنے کو تیار ہیں چوہدریوں کے باغی منصوبے کے تحت عمران خان کی جگہ نیا وزیراعظم لایا جائے۔ جو چوہدری ہو. یا چوہدری جیسا ہو،پنجاب میں سیاسی دنگل کی تیاریاں عروج پر ہیں جو پنجاب سے مرکز پرچڑھائی کے لیے شروع کیا گیا ہے اسی تناظر میں مسلم لیگ ن نے بھی چوہدریوں کی بغاوت کو. مکمل طور پر کامیاب بنانے کے لیے قریبی رابطے رکھے ہوئے ہیں اور نواز لیگ پنجاب میں سلطنت چاہتے ہیں اور وہ چوہدریوں کے ساتھ مل کر اپنا کھویا ہوا مقام. نئے الیکش سے قبل. حاصل کرنا چاہتے ہیں، جبکہ گجرات کے چوہدری دوسروں کی بیساکھی کا سہارا لیکر اپنی کھوئی سیاسی طاقت واپس لانا چاہتے ہیں –

چوہدری منصوبہ کے تحت ان ہاؤس تبدیلی لاکر ایوان میں نیا وزیراعظم لایا جائے۔ جو چوہدریوں میں سے ہو. یا. چوہدریوں کی بولی بولنے والا. ہو، جبکہ اپنوں کی بغاوت سے باخبر عمران خان نے سیاسی دنگل. کا. مقابلہ کرنے کے لیے اپنی پریکٹس شروع کر دی ہے ذرائع بتاتے ہیں کہ ان کے پاس بھی کچھ ایسے طاقتور کارڈ موجود ہیں جوایسی صورت حال میں سیاست میں بھونچال. مچا دیں گے۔

سیاست کی راہداریوں سے ملنے والی بازگشت کے مطابق سیاست کی چال بازیوں میں ایک منصوبہ بنایا گیا تھا کہ ملک میں قومی حکومت کے طور پر تبدیلی لائی جائے اور اس سیٹ اپ کا وزیراعظم مسلم لیگ ن کے صدر میاں شہباز شریف کو لایا جائے مگر شہباز شریف ایسے سیٹ اپ کے وزیراعظم بننے پر رضامند نہیں ہوئے وہ ملک میں نئے الیکشن کے بعد وزیراعظم بننے کے خواب دیکھ رہے ہیں جبکہ انکی جگہ وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی بالکل تیار بیٹھے ہیں اور انکی پوری کوشش ہے کہ وزیراعظم کی شیروانی وہ جلد. سے جلد. پہن لیں، جسکے لئے وہ. اندرون و بیرون ملک لابنگ بھی کرتے چلے آئے ہیں –

ذرائع بتاتے ہیں کہ تحریک انصاف میں اور بھی کئی شاہ محمود قریشی وزیراعظم بننے کے لیے تیار بیٹھے ہیں۔ یہ بات قابل ذکر ہے کہ وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی تو بیرون ممالک سرکاری دوروں کے دوران وزیراعظم پاکستان بننے کے لیے لابنگ بھی کرتے رہے ہیں،
اب یہ خبریں بھی سامنے آ رہی ہیں کہ شاہ محمود قریشی نے چوہدریوں کا چوہدری بننے کے لیے خود کو. پیش کردیا ہے اور اپنے لئے لابنگ بھی تیز. کردی ہے مگر چوہدری مسلم لیگ ن کے ساتھ مل کر پنجاب اور مرکز میں حکمرانی کی منصوبہ بندی کرچکے ہیں اور وہ کوئی غلطی نہیں کرنا چاہتے، اب دیکھنا ہے کہ پنجاب کا چوہدری گورنر اور پنجاب اسمبلی کا چوہدری سپیکر مستقبل قریب میں گیم کا رخ کسے بدلتے ہیں اور عمران خان اپنے طاقتور پتوں کا استعمال کس. کامیابی سے کر پاتے ہیں اور اپنے خلاف اپنوں کی بغاوت کو کیسے ناکام بناتے ہیں.

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں