انجمن طلبا اسلام نے طلبہ یونین پر پابندی کیخلاف احتجاجی تحریک چلانے کا اعلان کردیا، لیکن کیسے؟

فیصل آباد ، ملک شفیق

انجمن طلبا اسلام نے طلبا یونین پر پابندی کے خلاف احتجاجی تحریک بھرپور طریقے چلانے کا اعلان کر دیا حکومت فوری طور پر طلبا یونین پر پابندی ختم کرے طلبا حقو ق کےلۓ انجمن طلبا اسلام کسی قربانی سے دریغ نہیں کرے گی –

ان خیالات کا اظہار انجمن طلبا اسلام کے زیر اھتمام طلبا یونین پر پابندی کے خلاف احتجاجی پریس کانفرنس مقامی ریسٹورینٹ میں سابق مرکزی صدر معظم شہزاد ساھی اور ناظم ضلع عمیر اعوان نے کیا اور کہا کہ آج ضلع بھر میں مرکزی ھدایت پر یوم سیاہ منایا گیا ھے اور کہا آٸین طلبا کو یونین سازی کا حق دیتا ھے عرصہ 36 سال سے طلبا یونین کے الیکشن پر پابندی لگا رکھی ھے طلبا کے حقو ق پر مارشل لا لگا ھوا ھے جو بھی حکومت آٸی بحالی کے وعدے کیے مگر طلبا یونین بحال نہیں کی گٸ اور مزید کہا حکومت نے یوتھ کا نعرہ لگایا تھا مگر افسوس طلبا کو حقوق نہیں دیے جارھے آۓ دن فیسوں میں اضافہ ھو رھا ھے ملک میں یکساں نظام تعیلم نافذ کیا جاۓ اور مزید کہا طلبا قوم کے معمار ھیں طلبا یونین کی بحالی سے ھی حکومت پاکستان کی جمہوریت کا اصل چہرہ سامنے آۓ گا حکومت اپنا وعدہ پورا کرے اگر جلد طلبا یونین بحال نہ کی گٸ تو سڑکوں پر دما دم مست قلندر ھوگا اور طلبا اپنے حقو ق کےلۓ احتجاج کے لۓ میدان عمل ھونگے

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں