سینٹرل جیل فیصل آباد میں جاری میگا کرپشن سکینڈل بے نقاب ، شہری نے حکام کو کیا خط لکھ دیا؟؟


فیصل آباد ، قمر مرزا

فیصل آباد ریجن میں بڑی جیل سنٹرل جیل کرپشن کا گڑھ،قیدیوں سے سہولیات کی فراہمی کے عوض روزانہ لاکھوں وصول کیےجانے کا انکشاف، شہری نے حکام کو لکھے خط میں سنٹرل جیل میں جاری میگا کرپشن بے نقاب کر دی،

تفصیل کے مطابق کہکشاں کالونی جڑانوالہ کے رہائشی خضر حیات نے وزیر اعظم،آئی جی جیل خانہ جات،اور حساس اداروں کے نام لکھے خط میں بتایا ہے کہ فیصل آباد سنٹرل جیل کے جیل ڈپٹی سپرنٹنڈنٹ فضل الہی لاڑا نے جیل میں قیدیوں کی بارکیں تبدیل کرنے فیکٹری اور لنگر ڈیوٹی سے چھوٹ اور رہا ہونے والے قیدیوں کے ریکارڈ میں خود ہی ردوبدل کے بعد درستگی کے عوض مبینہ طور پر 10/10ہزار وصول جبکہ سزا یافتہ قیدیوں کو یونیفارم کی بجائے پرائیویٹ کپڑے پہننے کی فی قیدی 5 ہزار ماہانہ فیس مقرر کر رکھی ہے شہری کے مطابق سنٹرل جیل میں قید امیر طبقہ سے جیل ڈپٹی سپرنٹنڈنٹ گائے بھینسیں اور دیگر قیمتی اشیاء بھی دھڑلے سے وصول جبکہ جیل میں اجارا داری قائم کر کے ڈیمانڈ پوری نہ کرنے والے قیدیوں پر جینے کے لیے زمین تنگ کر رکھی ہے شہری کی جانب سے جیل ڈپٹی سپرنٹنڈنٹ کو قیدیوں سے وصول ہونے والی روزانہ کی مبینہ اضافی آمدن 10 سے 15 لکھ بتائی گئی ہے اس حوالہ سے ذرائع کا کہنا ہے کہ فیصل آباد سنٹرل جیل کے علاوہ پاکستان بھر کی جیلوں میں جیل افسران کی جانب سے کرپشن کی ایسی سرگرمیاں عروج پر جبکہ جیلوں میں ہونے والی میگا کرپشن کی گنگا میں جیل کے دیگر اعلی افسران بھی ہاتھ دھونے میں مصروف ہیں

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں