دل نا امید تو نہیں ، ڈرامہ میں کیسا مواد کہ پیمرا کا نوٹس جاری ، اداکارہ کا رد عمل کیا؟؟

کراچی ، شوبز ڈیسک

ایک نجی چینل پر دکھائے جانیوالے ڈرامہ ” دل نا امید تو نہیں” کو پیمرا کی جانب سے نوٹس جاری کردی ہے جس میں‌واضح کیا گیا ہے کہ اس ڈرامے میں نامناسب مواد دکھایا جارہا ہے – اس حوالے سے معروف اداکارہ اور مرکزی کردار ادا کرنے والی یمنا زیدی کا کہناہے کہ انہیں سمجھ نہیں آرہی ہے کہ پیمرا نے ڈرامہ کے خلاف نوٹس کیوں جاری کیا۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق اداکارہ نے گذشتہ ہفتے ایک انٹرویو میں کہا کہ “اس ڈرامے میں ہدایتکاروں کی جانب سے اٹھائے گئے نکات بہت اہم تھے لیکن ناجانے کیوں پیمرا کی جانب سے نوٹس دیا گیا جس پر میں بہت مایوس تھی۔ پیمرا نے منگل کےروز ڈرامہ ‘ دل نا امید تو نہیں’ بنانے والوں کو ایک نوٹس جاری کیا تھا، جس میں کہا گیا ہے کہ ڈرامہ میں دکھایا گیا مواد “نامناسب” ہےجبکہ ڈرامہ پروڈکشن کو مواد کی جائزہ لینے اور اتھارٹی کے ضابطہ اخلاق کے مطابق اس میں ترمیم کرنے کے لئے پانچ دن کا وقت دیا گیا تھا۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق اداکارہ کا کہنا تھا کہ “اگر ہم سرکاری اسکولوں ، اپنی گلیوں اور دیہاتوں میں ہونے والی باتوں کے بارے میں بات نہیں کرتے ہیں تو ، ہمیں صرف ایک بچے کے ساتھ ہونے والی بدفعلی کے بارے میں خبریں سنائی دیں گی۔ پیمرا نے کہا کہ دل نا امید تو نہیں کی دوسری ، تیسری اور چوتھی اقساط قابل اعتراض مناظر ، گالی گلوچ اور غیر مہذبانہ اشاروں پر مشتمل ہے۔جس کی وجہ سے متعدد شکایات موصول ہوئی ہیں۔ اس حوالے سے اداکار عمیر رانا نے بھی پیمرا کے نوٹس پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ دل نا امید تو نہیں لوگوں کو انسانی اسمگلنگ کے بارے میں آگاہ کرنے کی ایک کوشش ہے۔

میڈیا رپورٹس میں یہ بھی واضح کیا گیا ہے کہ اس ڈرامے میں وہاج علی ، یاسرہ رضوی ، نادیہ افگن اور سمیہ ممتاز مرکزی کردار ادا کر رہے ہیں۔ اس میں انسانی اسمگلنگ اور بچوں سے بدسلوکی جیسے سماجی امور کے بارے میں بات کی گئی ہے جبکہ ڈرامہ کو آمنہ مفتی نے تحریر کیا ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں