پاکستانی طالبہ پر نامعلوم شخص نے تیزاب پھینک دیا ، پولیس نے اب تک کیا کارروائی کی؟؟

نیوز یارک ، انٹرنیشنل نیوز ڈیسک

امریکا کے شہر نیویارک میں ایک پاکستانی طالبہ پرنامعلوم شخص نے تیزاب پھینک دیا اور فرار ہو گئے اور ابھی تک پولیس ان ملزمان کو گرفتار نہیں کر سکی جس کے بعد تیزاب پھینکنے والے ملزم کی نشاندہی کرنے والے کیلئے انعامی رقم کا اعلان کر دیا گیا ہے۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق پاکستانی نژادطالبہ21 سالہ فاطمہ اکرم پر 17 مارچ کو نامعلوم شخص نے تیزاب پھینکا تھا۔ اس افسوسناک واقعہ کے وقت وہ اپنے والد کیساتھ گھر جا رہی تھی۔ تیزاب حملے نے میڈیکل کی طالبہ کا چہرہ اور آنکھیں بری طرح متاثر ہوئی ہیں۔

میڈیا رپورٹس میں بتایا گیا کہ فاطمہ اکرم کے گردن اور بازو بھی تیزاب سے جل گئے ہیں۔ نیویارک پولیس نے ملزموں کی نشاندہی کرنے والے کیلئے 10ہزارڈالر انعام کا اعلان کیا ہے۔سی سی ٹی وی ویڈیو میں دیکھا جا سکتا ایک پاکستانی طالبہ اپنے گھر کے دروازے میں داخل ہونے والی تھیں کہ ایک نامعلوم شخص باہر سے بھاگتا ہوا آیا اور اس نے سیاہ رنگ کا محلول لڑکی پر پھینک کر فرار ہوگیا۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق ڈاکٹرز نے خدشہ ظاہر کیا ہے کہ لڑکی کی بینائی درست نہیں ہو سکے گی۔ پولیس کے مطابق ملزم کی گرفتاری کیلئے تمام تر کوششیں کی جا رہی ہیں اورجلد اسے انصاف کے کٹہرے میں لایا جائے گا۔پولیس کا یہ بھی کہنا ہے کہ واقعہ نسلی تعصب کا ہے یا نہیں فی الحال کچھ بھی کہنا مشکل اور قبل از وقت ہوگا، تاہم ملزم کی تلاش کی جا رہی ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں