معروف اداکار کو 27 خواتین نے جنسی زیادتی و جنسی ہراسگی کا ملزم قرار دیدیا؟؟؟

لندن ، شوبز ڈیسک

برطانیہ کے معروف اداکار و ڈائریکٹر نوئیل کلارک کو27 خواتین نے جنسی زیادتی و جنسی ہراسگی کا ملزم قرار دے دیا۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق میل آ ن لائن کی جانب سے واضح کیا گیا کہ نوئیل کلارک پر کئی اداکاراﺅں نے الزام عائد کیا ہے کہ اس نے انہیں جنسی زیادتی و ہراسگی کا نشانہ بنایا۔ ان میں معروف اداکارہ جاہینا جیمز بھی شامل ہیں جو کلارک کی سپرہٹ فلم ’Brotherhood‘ میں کام کر چکی ہیں۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق کلارک نے جاہینا جیمز کا برہنہ حالت میں آڈیشن کیا اور خفیہ طور پر اس کی ویڈیو بنا لی تھی۔جاہینا جیمز نے کلارک کے خلاف درج کرائے گئے مقدمے میں یہ انکشاف بھی کیا ہے کہ جب کلارک کے خفیہ ویڈیو بنانے کا اسے علم ہوا تو اس نے پولیس کو رپورٹ کرنے کی کوشش کی تھی لیکن پولیس کی طرف سے یہ کہہ کر رپورٹ درج کرنے سے انکار کر دیا گیا کہ جب تک کلارک اس ویڈیوکی وجہ سے اسے بلیک میل نہیں کرتا، تب تک اس کے خلاف رپورٹ درج نہیں ہوسکتی۔ یہ بھی پڑھیں:منی پھر بدنا م ہو گئی۔۔رپورٹ کے مطابق ایک نوعمر اداکارہ کی طرف سے الزام عائد کیا گیا ہے کہ کلارک نے ایک فلم کے سیٹ پر اس کے چہرے اور منہ کے ساتھ انتہائی غیر اخلا قی حر کت کی تھی ۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق کلارک کے ساتھ کام کرنے والی ایک اور خاتون فلم پروڈیوسر نے الزام عائد کیا ہے کہ ”کلارک ایک بار کار میں میرے سامنے برہنہ ہو گیا تھا۔ ایک بار اس نے لفٹ میں میرے جسم کو نازیبا انداز میں چھوا۔ اس نے ایک بار میرے سامنے اعتراف کیا تھا کہ جب انہوں نے مجھے اپنے ساتھ کام دیا تو ان کے ذہن میں تھا کہ وہ میرے ساتھ جنسی تعلق قائم کریں گے اور پھر نوکری سے نکال دیں گے۔

میڈیا رپورٹس میں یہ بھی واضح کیا گیا کہ 45سالہ کلارک نے 20سال پہلے ٹی وی سے اداکاری کا آغاز کیا اور پھرڈائریکٹر بھی بن گئے۔ 20 خواتین کی طرف سے الزامات عائد کیے جانے کے بعد برٹش اکیڈمی فلم ایوارڈز کی طرف سے نوئیل کلارک کی ممبرشپ معطل کر دی گئی ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں