بجٹ میں غیر ضروری ٹیکسز ختم کرنے کا عندیہ حکومت کا خوش آئندہ فیصلہ ہے، حاجی اصغر

فیصل آباد ، ملک شفیق

فیصل آباد چیمبر آف کامرس کے سابق ایگز یکٹو ممبر و چیئرمین برائے قائمہ کسٹم انیڈ ڈرائی پورٹ و انجمن تاجران سٹی فیصل آباد کے نائب صدر حاجی محمد اصغر نے’ آنے والے مالی بجٹ 2021-22 میں حکومت کی طرف سے غیر ضروری ٹرٹیکسز ختم کرنے کے عندیہ کو خراج تحسین پیش کرتے ہوئے کہاہے کہ 17 سال بعد ملک خسارے سے نکل کر سرپلس میں داخل ہوا ہے اور ملکی معیشت ٹیک آف کر چکی ہے انشا االلہ عمران خان کی قیادت میں حکومت ملک و قوم کومالی بحران سمیت دیگر بحرانوں سے نکال کر قومی وقار کو بحال کرنے اور ترقی و خوشحالی کی منزل سے ہمکنار کرنے میں کامیاب ہوجائیگی، سابق حکومتوں نے ٹیکسز کی بھرمار سے معیشت کو فائدے کی بجائے نقصان پہنچایا جس کی وجہ ملک مالی بحران کا شکار ہوا، اس لئے ضروری ہے کہ ٹیکسز کی تعداد اور شرح کو کم کیا جائے اگر تاجروں پر غیرضروری ٹیکسز ختم کر دیئے جائیں تو تاجر طبقہ سکون سے اپنا کاروبار کرے اور پہلے سے بھی زیادہ ٹیکسزدے سکتے ہیں جس سے ملک میں ترقی اور خوشحالی آئے گی ، انہوں نے کہا کہ بزنس کمیونٹی ٹیکس چور نہیں ہے وہ ٹیکس اداکرناچاہتی مگر ٹیکس وصولی کا نظام درست نہیں ہے چھوٹے تاجروں اور کاروباری حضرات کیلئے فکسڈ ٹیکس کا نظام لایا جائے تاکہ چھوٹے تاجر آسانی کے ساتھ ٹیکس ادا کر سکیں اور ٹیکسوں کی ادائیگی میں انہیں کوئی دشواری کا سامنا نہ کرنا پڑے-

انہوں نے مزہد کہا کہ ودہولڈنگ ٹیکس سمیت غیر ضروری ٹیکس ختم کئے جائیں’ تاجروں اور ایف بی آر کے درمیان دوستانہ ماحول قائم کیا جائے اور ایف بی آر کی طرف سے سروے کے نام پر تاجروں کو بلیک میل نہ کیا جائے’ حکومت آنے والے بجٹ میں تاجر برادری کے لئے خصوصی ریلیف مہیا کرے’ بجلی ‘ گیس اور پٹرولیم کی قیمتوںکو کم کیاجائے تاکہ چھوٹے تاجر اپنے پائوں پرکھڑے ہوکر حکومت کے لئے ریڑھ کی ہڈی کاکردارادا کرسکے’ ٹیکسز کی بھرمار سے معیشت کو فائدے کی بجائے نقصان ہو رہا ہے اس لئے ٹیکسز کی تعداد اور شرح کو کم کیا جائے چھوٹے تاجروں اور کاروباری حضرات کیلئے فکسڈ ٹیکس کا نظام لایا جائے تاکہ چھوٹے تاجر آسانی کے ساتھ ٹیکس ادا کر سکیں اور ٹیکسوں کی ادائیگی میں انہیں کوئی دشواری کا سامنا نہ کرنا پڑے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں