پاکستان نوجوان نے موٹر وے پر ہنگامی حالات پر اطلاع کیلئے موبائل ایپ متعارف کروا دی؟

کراچی ، نیوز ڈیسک

صوبہ سندھ کے دارالحکومت اور پاکستان کے سب سے بڑے شہر کراچی کے ایک نوجوان شعیب احمد نے موبائل پر ایک ایسی ایپلی کیشن متعارف کروائی ہے جس سے ہنگامی حالت میں مسافروں کی لوکیشن متعلقہ اداروں تک پہنچائی جا سکے گی۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق کراچی کے ایک نوجوان شعیب احمد نےبتایا ہے کہ جامعہ کراچی سے کمپیوٹر سائنس میں ڈگری حاصل کی اور آج کل دیگر ساتھیوں کے ساتھ ایک خاص موبائل ایپلی کیشن تیار کرنے کے بعد دنیا کے مختلف ممالک میں خدمات فراہم کر رہے ہیں۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق شعیب احمد اور ان کی ٹیم نے پاکستان میں موٹر وے کی مناسبت سے ایک خاص موبائل ایپلی کیشن بنائی ہے جو ناصرف ٹول پلازہ کے جھنجٹ سے نجات دلا سکتی ہے بلکہ کسی بھی ہنگامی حالت میں مسافروں کی لوکیشن متعلقہ اداروں تک پہنچا سکتی ہے۔ اس کا مطلب یہ ہوا کہ موبائل ایپ استعمال کرنے والے حادثات میں بروقت مدد کے علاوہ لاہور موٹر وے پر خاتون کے ساتھ ہونے والی زیادتی جیسے واقعات سے بچ سکتے ہیں۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق شعیب احمد کا کہنا تھا کہ اسمارٹ موٹروے ایپ کے تحت آپ کو اپنے راستے میں ادا کرنے والے ٹول ٹیکس کا بھی علم ہو سکے گا اور لمبی لمبی قطاروں سے بھی چھٹکارا ممکن ہو جائے گا۔ شعیب احمد اور ان کی ٹیم اس وقت امریکا میں موٹر وے کے لیے کام کر رہی ہے اور پاکستان میں اپنی اس ایپ کو سرکاری سطح پر متعارف کروانے اور عام شہریوں کو مدد فراہم کرنے کی خواہاں ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں