نااہل پالیسی میکرز نے300 فیصد مہنگائی کرکے حکومت کو مشکل میں‌ ڈال دیا ، حاجی اصغر

فیصل آباد ، ملک شفیق

فیصل آباد چیمبر آف کامرس کے سابق ایگز یکٹو ممبر و چیئرمین برائے قائمہ کسٹم انیڈ ڈرائی پورٹ و انجمن تاجران سٹی فیصل آباد کے نائب صدر حاجی محمد اصغر نے کہا ہے کہ ناہل پالیسی میکروں نیتین سالوں میں 300فیصدمہنگائی کرکے عمران خان کی حکومت مشکل میں ڈال دیا ہے، حکومت اپوزیشن سے زیادہ مہنگائی سے خطرک ہے اگرغریب عوام سڑکوں پر نہیں آئی تو حکومت کو گھرجانا پڑے گا، آٹا،چینی، گھی، بجلی، گیس،پٹرول اورادویات کی قیمتیں، عدم استحکام سیاسی اور معاشی افراتفری سوالیہ نشان بنی ہوئی ہے پیدا واری لاگت میں اضافہ سے تاجروں کیلئے کاروبار جاری رکھنا مشکل ہوچکاہے،حکومت لیوی ٹیکس اور ایڈجسٹمنٹ کے نام پر قیمتیں بڑھا کر عوام کی جیبوں پر ڈاکہ ڈال رہی ہے۔ پاکستان میں اس وقت ایک لیٹر پٹرول پرتقریباً66روپے تک کے مختلف ٹیکس عائد ہیں جوکہ خالصتاً حکومت کامنافع ہے۔حکومت اگر اپنے منافع میں کمی کردے تو عوام کو70 روپے لٹر تک پٹرول مل سکتا ہے،

انہوں نے پٹرول کی قیمت میں 5 روپے لٹر اضافے کوناہل پالیسی میکروں کا ظلم قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ جب تک وزیر اعظم عمران خان خوشامدی ٹولہ کے حصار سے باہر نہیں نکلیں گے نئے پاکستان کا خواب پورا نہیں ہوگا، معاشی بدحالی کے شکارغریب عوام کے لئے قیمتوں میں اضافہ دشمنی کے مترادف ہے،پٹرل مہنگاہونے کے بعدروزمرہ کی تمام اشیاء مہنگی ہوجائیں گی۔ جبکہ وزیر اعظم عمران خان کی حکومت کو ناکام بنانے کی سازشیں کرنے والے کامیاب ہورہے اگر حکومت مہنگائی کنٹرول نہ کرسکی تو آئندہ انتخابات میں تحریک انصاف کا صفایا ہوجائے گا، انہوں نے کہا کہ تاجروں نے عمران خان کے وعدوں اور دعوں پر یقین کرتے ہوئے انہیں کندھوں پر سوار کرکے وزیر اعظم ہاؤس پہنچایا تھا لیکن پرانے پاکستان کے کپتان نے نئے پاکستان کا وزیر اعظم بنکرمہنگائی، بیروزگاری کا سونامی برپا کرکے پوری قوم کو آٹھ آٹھ آنسو رولا رکھا ہے۔۔اُنہوں نے کہاکہ موجودہ حکومت کی ناتجربہ کاری اورنااہلی کی وجہ سے غریب عوام زندہ درگورہوچکے ہیں۔2وقت کی روٹی اوریوٹیلٹی بلزکی ادائیگی بھی سوالیہ نشان بن چکی ہے۔ایسے حالات میں پٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافہ عوام کے زخموں پر نمک پاشی کرنے کے مترادف ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں