چک جھمرہ کے قریب سینکڑوں بوری یوریا کھاد کا ذخیرہ موجود ہونے کا انکشاف ؟؟

چک جھمرہ (افضال تتلہ)

چک جھمرہ کے قریب سینکڑوں بوری یوریا کھاد کا سٹاک موجود ہونے کا انکشاف ہوا ہے جبکہ انتظامیہ صرف کھاد ڈیلروں پر چڑھائی کرکے سب اچھا رپورٹ پیش کردی ہے کسی بھی فیکٹری یا ملز میں موجود زخیرہ کی گئی یوریا پر کوئی بھی کاروائی کرنے کو تیار نہیں،کاشتکار گندم کی بوائی کے موقع پر کھاد کی عدم دستیابی اور مہنگے داموں کی وجہ سے پریشان ہوگے ہیں کاشتکاروں نے ارباب اختیار سے ذخیرہ اندوزوں کے خلاف کارروائی کی اپیل کردی –

ذرائع کے مطابق چک جھمرہ کے قریب ایک فرم کے پرائیویٹ گودام میں سینکڑوں بوری یوریا کا سٹاک سامنے آیا ہے ذخیرہ اندوزی سے بازار میں کھاد کی کمی بھی ہوچکی ہے دوسری جانب گندم کی فصل میں یوریا کے استعمال کی وجہ سے کھاد کی مانگ میں اضافہ دیکھنے میں آرہا ہے جبکہ ڈیلروں نے کھاد کی عدم دستیابی کا بہانہ بنا کر مرضی کے ریٹ مقرر کررکھے ہیں ان سارے حالات میں گندم کے کاشتکاروں کو پریشانی کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے مگر انتظامیہ کھاد کے چھوٹے موٹے ڈیلروں کے خلاف تو کاروائی کرتی ہوئی دکھائی دیتی ہے مگر کسی بھی ملز کے گودام کو چیک کرنے سے گریزاں ہیں کاشتکاروں کا کہنا ہے کہ جس طرح ان کو شناختی کارڈ پر ایک بوری یوریا دی جارہی ہے اسی ملز اور فیکٹریوں کو بھی سینکڑوں بوریوں کی بجائے محدود سٹاک دیا جائے تاکہ یوریا کھاد کی کمی کا سامنا نہ کرنا پڑے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں